Thursday, October 28, 2021  | 21 Rabiulawal, 1443

اسلام آباد:ہوٹلوں پربیڈ ٹیکس،ایکسائز کی آمدنی بڑھ گئی

SAMAA | - Posted: Aug 4, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 4, 2021 | Last Updated: 3 months ago

اسلام آباد کے محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے چند سیکٹرز سے ٹیکس وصولی کا اپنا نظام قدرے بہتر کرلیا ہے جس کی بدولت قومی خزانے میں رہائشی ہوٹلوں سے بیڈ ٹیکس کی مد میں ملنے والی رقم میں خاطر خواہ اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔

کچھ عرصہ پہلے تک مذکورہ مد میں محکمہ ایکسائز کو حاصل ہونے والی آمدنی انتہائی کم ہوتی تھی جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ سن 2018 تک اسلام آباد کے 25 یا اس سے زائد یونٹس یا کمروں والے ہوٹلوں سے بیڈ ٹیکس کی وصولی کے ذریعے حکومت کو زیادہ سے زیادہ 4 لاکھ روپے سالانہ کی آمدنی ہوتی تھی جبکہ  اب یہ آمدنی صرف 2 بڑے ہوٹلوں سے ماہانہ 2 تا ڈھائی کروڑ روپے تک جاپہنچی ہے۔ واضح رہے کہ یہ آمدنی صرف محکمہ ایکسائز کی ہے جبکہ فیڈرل بورڈ آف ریوینو کی ہوٹلوں سے آمدنی اس سے علیحدہ ہے۔

ہوٹلوں کو اپنے گاہکوں سے ملنے والی رقم کا 5 فیصد حصہ بیڈ ٹیکس کی مد میں ادا کرنا پڑتا ہے جبکہ ہوٹلوں سے وصول کی جانے والے سیلز ٹیکس و دیگر محصولات اس سے الگ ہیں۔

محکمہ ایکسائز کے دائرہ کار میں وہ ہوٹل اور گیسٹ ہاؤس آتے ہیں جہاں 25 یا اس سے زائد رہائشی یونٹ یا کمرے ہوتے ہیں۔ متعلقہ حکام کا خیال ہے کہ ہوٹلوں اور گیسٹ ہاؤسز سے بیڈ ٹیکس کی مد میں اس سے زیادہ بھی آمدنی ممکن ہے جس کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے محمکہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن، اسلام آباد  کے ڈائریکٹر بلال اعظم نے کہا کہ وفاقی داراحکومت میں واقع دو فائیو اسٹار ہوٹلوں سے بیڈ ٹیکس کی مد میں ماہانہ 2 تا ڈھائی کروڑ روپے کی آمدنی ہو رہی جبکہ تین سال قبل یہ ریکوری صرف 3 تا 4 لاکھ روپے سالانہ تھی۔

انہوں نے مزید کہا کہ محمکہ ایکسائز شہر کے تمام ہوٹلوں و گیسٹ ہاؤسز سے بیڈ ٹیکس کی وصولی بہتر بنانے کے لیے کوشاں ہے۔

بلال اعظم کا کہنا تھا کہ ان تمام  رہائشی ہوٹلوں و گیسٹ ہاؤسز کو ایک انٹرفیس فراہم کیا جائے گا جو محمکہ  کے ٹیکس وصولی نظام سے منسلک ہوگا۔

انہوں نے بتایا کہ ہم ایک ایسا نظام ترتیب دے دہے ہیں جس کے تحت کسی مہمان کی ہوٹل میں آمد کے اندراج کے ساتھ ہی بیڈ ٹیکس وصول کرلیا جائےگا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ اس مقصد کے لیے اب اس بات کی ضرورت نہیں رہے گی کہ ہمارے انسپکٹرز ذاتی طور پر ہوٹلوں میں جا کر ان  کے کھاتے چیک کریں۔

بلال اعظم کا کہنا تھا کہ بیڈ ٹیکس کی وصولی کے حوالے سے محکمے کا فیلڈ اسٹاف اسلام آباد بھر کا سروے کرے گا۔

ڈائریکٹر ایکسائز نے کہا کہ جہاں تک بزنس یا پروفیشنل ٹیکس کو محکمہ ایکسائز کے ٹیکس نیٹ میں لانے کا تعلق ہے محکمے نے سیکورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن سے اپنا ڈیٹا مربوط کرنے کی منصوبہ بندی کی ہے جس کے ذریعے جیسے ہی کوئی کمپنی رجسٹرڈ ہوگی محکمے کے سسٹم کو اس بات کی اطلاع ہوجائے گی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube