Sunday, September 26, 2021  | 18 Safar, 1443

’وزیراعظم ہاؤس کرائے کیلئے خالی ہے‘

SAMAA | - Posted: Aug 2, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 2, 2021 | Last Updated: 2 months ago

وزیراعظم ہاؤس کرائے کیلئے خالی ہے، حکومت نے سرکاری رہائش گاہ کو یونیورسٹی کے بجائے آمدن کا مستقل ذریعہ بنانے کا فیصلہ کرلیا۔

وزیراعظم عمران خان نے 19 اگست 2018ء کہا تھا کہ میری سوچ ہے کہ ہم اسے (وزیراعظم ہاؤس کو) ایک اعلیٰ قسم کی یونیورسٹی بنائیں، جو ریسرچ کرے گی اور یہاں دنیا کے بڑے بڑے اسکالرز بلائیں گے۔

تاہم اب پی ٹی آئی حکومت نے عمران خان کے اعلان سے یو ٹرن لیتے ہوئے وزیراعظم ہاؤس کو مستقل آمدنی کا ذریعہ بنانے کیلئے اسے کرائے پر دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم ہاؤس میں اب پڑھائی نہیں ہوگی بلکہ فیشن اور ثقافت کی تقریبات ہوں گی۔

وفاقی کابینہ کے ایجنڈے میں شامل تجویز کے مطابق وزیراعظم ہاؤس میں مقامی اور عالمی فوڈ، فیشن، ثقافتی تقریبات اور ونٹیج گاڑیوں کی نمائش کرائی جائے گی۔

اعلیٰ سطح کی سفارتی تقریبات اور سیمینارز بھی وزیراعظم ہاؤس میں ہوں گے، پرائم منسٹر ہاؤس کے تجارتی استعمال کیلئے 2 کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئیں جو سیکیورٹی اور ڈسپلن برقرار رکھنے کی ذمہ دار ہوں گی۔

حکومت اس سے قبل وزیراعظم ہاؤس میں پالی گئی بھینسیں اور قیمتی گاڑیاں بیچ کر سرکاری خزانے میں پیسہ جمع کراچکی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube