Thursday, September 23, 2021  | 15 Safar, 1443

بھارتی حکومت کی سرپرستی میں جاسوسی، پاکستان کی شدید مذمت

SAMAA | - Posted: Jul 23, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Jul 23, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Foreign Office

فوٹو: ریڈیو پاکستان

ملک کے صحافیوں، ججز، سفارتکاروں اور حکومتی حکام کے ٹیلی فون ہیک کرنے کے معاملے پر پاکستان نے بھارتی حکومت کی سرپرستی میں جاسوسی کی شدید مذمت کی ہے۔

پاکستانی دفتر خارجہ نے عالمی میڈیا کی رپورٹ پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اقوام متحدہ اور متعلقہ اداروں سے تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ جاسوسی عالمی اصولوں کی خلاف ورزی ہے۔ پاکستان بھارتی وسیع البنیاد ریاستی جاسوسی آپریشنز کی پر زور مذمت کرتا ہے، اختلافی آوازوں کی جاسوسی آر ایس ایس اور بی جے پی کا پرانا نصاب ہے۔

وزیراعظم عمران خان اور کابینہ کی جاسوسی کا بھی انکشاف

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانیت سوز مظالم اور پاکستان مخالف گمراہی پھیلانا بھارتی ایجنڈا ہے، دنیا نام نہاد بھارتی ’’جمہوریت‘‘ کے اصل چہرے سے واقف ہے۔ ہندوستانی جمہوریت کی اصلیت انڈین کرانیکل اور یورپی یونین ڈس انفو لیب ہے۔

ترجمان کے مطابق ہندوستان سے متعلق تمام انکشافات پر انتہائی قریبی اور گہری نظر ہے۔ پاکستان، بھارتی زیادتیوں پر مناسب عالمی فورمز کی توجہ مبذول کرائے گا۔

واضح رہے کہ اسرائيلی سافٹ ويئر کے ذريعے مودی حکومت کی جانب سے وزيروں، صحافيوں اور تاجروں سمیت پڑوسی ممالک کی اہم شخصیات کی جاسوسی کا انکشاف ہوا تھا۔

اسرائيلی کمپنی کے ذريعے بھارت وزيراعظم عمران خان اور کابينہ ارکان کے فون ہيک کرتا رہا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube