Sunday, September 26, 2021  | 18 Safar, 1443

لاہور: کیا آپ ‘طلسماتی وادی’ کے بارے میں جانتے ہیں؟

SAMAA | - Posted: Jul 16, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 16, 2021 | Last Updated: 2 months ago

یہاں ہر شئے پتھر کی لگتی ہے

لاہور میں ایک ایسی 'طلسماتی وادی' بھی ہے جس میں داخل ہونے کے بعد آپ کو لگے گا گویا وہاں ہر شئے پتھر کی ہوچکی ہے اور یہ کوئی نظر کا دھوکا بھی نہیں، بالکل سچ ہے۔

لیکن ایسا نہیں کہ یہاں داخل ہونے والوں نے منع کرنے کے باوجود پیچھے مڑ کر دیکھا اور پتھر کے ہوگئے ہوں بلکہ یہ وہ مجسمے ہیں جو کاریگروں کی کمال مہارت کا شاندار نمونہ ہیں جنہیں دیکھنے والے بس دیکھتے ہی رہ جاتے ہیں۔

اس وادی میں کہیں انسانوں کے ماڈلز کھڑے نظر آتے ہیں تو کہیں پرندوں، جانوروں کے اور یہ سب انسانی ہاتھ کی ہنرمندی کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔

یہاں پاکستانی کی محسن شخصیات کے مجمسے بھی ہیں جن میں قائد اعظم اور علامہ اقبال بھی شامل ہیں۔

اس پتھر کی وادی یا اسٹون ویلی میں موجود مجسموں کو فائبر، ریت اور چاک سے تیار کیا جاتا ہے جنہیں دیکھ کر اصل کا گمان ہوتا ہے۔

کسی بھی ماڈل کی شکل و شباہت بناتے وقت خاصی محنت درکار ہوتی ہے۔ اسے لوگ اپنے گھروں کی سجاوٹ کے لیے بھی خریدنا پسند کرتے ہیں۔ اس وادی میں موجود فن پارے 5 ہزار روپے سے لے کر 25 لاکھ روپے مالیت تک کے ہیں۔

اسٹون ویلی میں جو بھی داخل ہو جاتا ہے وہ ہنر مندوں کے کام کی داد دیے بغیر نہیں رہتا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube