Thursday, September 23, 2021  | 15 Safar, 1443

ہمیں چین میں مظلوم مسلمانوں کا ساتھ دینا چاہیے،مفتی زبیر

SAMAA | - Posted: Jul 1, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 1, 2021 | Last Updated: 3 months ago

مذہبی اسکالر مفتی زبیر نے وزیراعظم کے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر چین میں مسلمانون کے ساتھ برا سلوک نہیں ہورہا تو اچھی بات ہے لیکن اگر آزاد ذرائع سے آنے والی خبریں درست ہیں تو پھر ہمیں مظلوم مسلمانوں کے حق میں بولنا چاہیے۔
سماء کے پروگرام سات سے آٹھ میں گفتگو کرتے ہوئے مفتی زبیر کا کہنا تھا کہ اگر وزیراعظم کے بیان کا مطلب یہ کہ مغربی میڈیا چین کےخلاف پروپیگنڈا کر رہا ہے تو ٹھیک لیکن پھر بھی ہمیں غیر جانبدارانہ تحقیقات کی بھی ضرورت ہے۔
مفتی زبیر کا کہنا تھا کہ ہمیں چین سے تعلقات کو مزید مضبوط کرنا چاہیے لیکن ساتھ ہی ہمیں سنکیانگ میں مسلمانوں کو درپیش صورتحال کی تحقیق بھی کرنی چاہیے۔
انہوں نے کہا کہ اگر ہماری خواہش کے عین مطابق چین کے مسلمانوں کو حقوق مل رہے ہیں تو بہت اچھی بات ہے لیکن اگر ان الزمات میں حقیقت ہے تو پھر پاکستان کو چاہیے کہ چینی حکومت سے بات کرے۔
مفتی زبیر کا کہنا تھا کہ آئے روز وہاں سے اس قسم کی خبریں آتی ہیں کہ لاکھوں مسلمانوں کو قید کرلیا گیا ہے اور نماز،اذان اور اسلامی شعائر پر پابندی ہے لہٰذا اگر ان الزامات میں کوئی سچائی ہے تو پھر ہمیں چینی حکومت سے مطالبہ کرنا چاہیے کہ سنکیانک کے مسلمانوں کو انسانی حقوق دے۔
انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا بیان یہ ہونا چاہیے تھا کہ ہم ان خبروں کی غیرجانبدارانہ اور آزادانہ تحقیق چاہتے ہیں اور ہم چاہتے ہیں کہ سنکیانک کے مسلمان وہاں سلامتی اور آزادی کے ساتھ زندگی گزاریں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube