Sunday, November 28, 2021  | 22 Rabiulakhir, 1443

ن لیگ اور تحریک انصاف نےسینیٹ الیکشن میں مک مکاکیا،مندوخیل

SAMAA | - Posted: Jun 23, 2021 | Last Updated: 5 months ago
Posted: Jun 23, 2021 | Last Updated: 5 months ago

پیپلزپارٹی کے رہنما قادرمندوخیل نے دعویٰ کیا ہے کہ تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن نے سینیٹ الیکشن میں پنجاب میں مک مکا کرکے نشستیں آپس میں تقسیم کی تھیں۔
سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفتگو کرتے ہوئے قادر مندوخیل کا کہنا تھا کہ آصف علی زرداری جہاں ڈیرے جما لیتے ہیں وہاں سے کوئی نہ کوئی نتیجہ ضرور نکلتا ہے۔
آصف زرداری اور پرویز الہٰی کی ملاقات پر تبصرہ کرتے ہوئے قادر مندوخیل کا کہنا تھا کہ بےنظیر بھٹو کی شہادت کے بعد ق لیگ ہمارے ساتھ حکومت میں بھی رہی ہے اور یہ ان کے ساتھ کوئی پہلی ملاقات نہیں تھی۔
انہوں نے کہا بےنظیر بھٹو کے نامزد کردہ باقی لوگوں کو بھی کوئی سزا نہیں ملی اکثر ضمانتوں پر ہیں جبکہ پرویز مشرف کو ریڈ کارپٹ پر باہر بھیجا گیا۔
پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما مسلم لیگ ن عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن میں اسپیکر صوبائی اسمبلی پرویز الہی نے رابطہ کر کے کہا کہ میں نہیں چاہتا کہ پنجاب میں سینیٹ الیکشن میں پیسہ چلے اس لیے ہونا یہ چاہیے کہ جس کی جتنی نشستیں متوقع ہوں اسے اتنی ہی سیٹیں ملیں۔
پنجاب میں حکومت کی تبدیلی کے لیے پیپلزپارٹی کے کوششوں پر تبصرہ کرتے ہوئے عطاتارڑ کا کہنا تھا کہ اگر پیپلزپارٹی، ن لیگ اور ق لیگ کی تمام سیٹیں مل جائیں پھر بھی ہمیں حکومت بنانے کےلیے آزاد اراکین کی حمایت کی ضرورت ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ پنجاب کے اہم اسٹیک ہولڈر ہم ہیں اور یہ فیصلہ اکیلے کوئی 7 نشستیں رکھنے والی پارٹی نہیں کرسکتی۔
عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ ہمیں دنیا کو یہ باور کرانا ہوگا کہ پچھلے 20 سال سے ہم نے کتنی قربانیاں دی ہیں کیوں کہ اس جنگ میں ہم نے 80 ہزار جانوں کی قربانیاں دیں۔
رہنما ن لیگ کا کہنا تھا کہ افغانستان سے امریکی فوج کے انخلاء کا پاکستان پر بھی اثر ہوگا اگر اہم انٹیلی جنس اداروں کی کوئی مشترکہ کمیٹی بنی ہے تو یہ اچھی بات ہے۔
عطا تارڑ کا مزید کہنا تھا کہ لاہور دھماکہ تشویش ناک ہے ہمیں آگے کے لائحہ عمل کے لیے سیاسی اتفاق رائے پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔
پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما تحریک انصاف عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ حکومت کو مختلف اداروں سے الگ الگ معلومات ملتی ہیں لیکن اب ایک ایسی کمیٹی بنائی گئی ہے جو ایک پلیٹ فارم سے معلومات پر مشاورت کرے گی۔
عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ کے تمام ادارے ملک کے سالمیت کے لے کام کرتے ہیں اور اگر مل کر کام کریں گے تو نتائج مزید بہتر ہوں گے۔
انہوں نے کہا کہ ملک دشمن عناصر کو ملک کی پرامن فضا قابل قبول نہیں ہے اور اس معاملے پر تمام سیاسی قیادت کو اکٹھا ہونے کی ضرورت ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube