لاہور:طالبعلم سے بدفعلی کا الزام،مفتی عزيز گرفتار

SAMAA | - Posted: Jun 20, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jun 20, 2021 | Last Updated: 1 month ago

پولیس نے مفتی عزیز الرحمان اور ان کے 2 بیٹوں کو گرفتار کرلیا۔ ملزمان کو میانوالی اور لاہنہ کے علاقوں سے گرفتار کیا گیا۔

پولیس کے مطابق مفتی عزيز الرحمان پر مدرسے کے طالبعلم سے بدفعلی کا الزام ہے۔ پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم مفتی عزیز الرحمان اور دیگر ملزمان کی گرفتاری کیلئے مختلف شہروں میں چھاپے مارے جا رہے تھے۔

پولیس نے یہ بھی بتایا کہ مدعی طالب علم محفوظ مقام پر ہے ، جب کہ مفتی عزیز الرحمان کے دیگر بیٹے روپوش ہیں۔

عزیزالرحمان کے خلاف طالبعلم صابر شاہ کی مدعیت میں مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج ہے۔ مفتی عزیز پر الزام ہے کہ اس طالبعلم کو امتخانات میں فیل کیا اور پاس کرانے کا لالچ دے کر بدفعلی کا نشانہ بناتا رہا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی۔ درج ایف آئی آر کے مطابق ویڈیو لاہور میں مدرسہ جامعیہ منظور الاسلامیہ کے برطرف عہدیدار مفتی عزیز الرحمان اور مدعی طالب علم کی ہے۔

لاہور:طالبعلم سے بدفعلی پرمدرسے کے استاد کیخلاف مقدمہ درج

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک ادھیڑ عمر کا شخص جس کی لمبی سفید داڑھی ہے اور وہ ہلکے رنگ کے شلوار قمیض اور واسکٹ میں ملبوس ہے اور اس شخص نے سر پر ٹوپی بھی پہنی ہوئی ہے۔ وہ کمرے کے فرش پر نیم درآز ہے۔ اسی دوران گہرے کپڑوں میں ملبوس ایک لڑکا کمرے میں داخل ہوتا ہے اور اس عمر رسیدہ شخص کے اوپر بیٹھ جاتا ہے۔

ویڈیو سامنے آنے پر مفتی عزیز الرحمان کی جانب سے ویڈیو پیغام بھی جاری کیا گیا تھا، جس میں ان کا کہنا تھا کہ 2 ڈھائی سال بعد اس ویڈیو کو وائرل کرنے اور سامنے لانے کا مقصد ان کی ساکھ کو نقصان پہنچانا ہے۔

ویڈیو میں موجود طالب علم اور مدعی کا ایف آئی آر میں کہنا تھا کہ اس کی جان کو خطرہ ہے اور مفتی عزیز اور ان کا بیٹے انہیں سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔

سما ڈیجیٹل سے گفتگو میں وفاق المدارس کے ترجمان نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ مفتی عزیز الرحمان کو شکایت اور انتظامیہ کے مابین مشاورت کے بعد مدرسے کی تمام ذمہ داریوں سے برطرف کردیا گیا ہے۔

مفتی عزیز الرحمان کے خلاف مقدمہ تھانا نارتھ کینٹ میں درج کیا گیا۔ مفتی عزیز الرحمان کے خلاف پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 377 (غیر فطری جرائم) اور دفعہ 506 (مجرمانہ دھمکی دینے کی سزا) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

WhatsApp FaceBook

2 Comments

  1. ilyas  June 20, 2021 11:39 am/ Reply

    g bilkul in ko sakht se sakht saza milni chaiye

  2. Anonymous  June 21, 2021 10:07 am/ Reply

    These news channel are the blessing I think, that can talk fearlessly in every aspect else against the government and army.

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube