نیگلیریاسے جاں بحق محمدعلی نے کینٹ اسٹیشن پرنماز اداکی تھی،اہلخانہ

SAMAA | - Posted: Jun 19, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jun 19, 2021 | Last Updated: 1 month ago

فوٹو: آن لائن

کراچی میں نیگلیریا فاؤلیری نے ایک اور جان لے لی، مرزا محمد علی جرال دماغ کو کھا جانیوالے امیبیا کے باعث انتقال کر گیا، وہ 26 مئی کو اپنے ایک عزیز کو چھوڑنے کینٹ ریلوے اسٹیشن گئے تھے جہاں انہوں نے وضو کے بعد نماز ادا کی تھی۔

متوفی کے بھائی مرزا محمد عاصم نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ محمد علی نے کینٹ اسٹیشن واپس گھر پہنچنے کے بعد شدید سر درد کی شکایت کی، حالت بگڑنے پر اسے قائد آباد کے ایک ہیلتھ سینٹر لے جایا گیا۔

عاصم کا مزید کہنا تھا کہ علی بالکل بچوں کی طرح کا برتاؤ کررہا تھا، ہم اس کے سمنے کھڑے تھے لیکن وہ ہمیں پہچان نہیں پارہا تھا، ڈاکٹرز نے کہا کہ اسے کسی بڑے اسپتال لے جایا جائے۔

اہل خانہ کا کہنا ہے کہ 29 مئی کو محمد علی کو جناح اسپتال لے جایا گیا، جہاں سے اسے گلشن اقبال میں قائم نجی اسپتال پٹیل اسپتال منتقل کردیا گیا۔ ڈاکٹرز نے یکم جون کو علی کی ریڑھ کی ہڈی سے سیمپل لے کر ٹیسٹ کیلئے آغا خان یونیورسٹی اسپتال بھجوایا، اگلے دن آنیوالی رپورٹ میں نیگلیریا فاؤلیری کی تصدیق ہوگئی اور اسی دن (2جون کو) محمد علی کا انتقال ہوگیا۔

سندھ نیگلیریا مانیٹرنگ اینڈ انسپیکشن ٹیم کے انچارج ڈاکٹر شکیل احمد نے تصدیق کی کہ دماغ کو کھاجانیوالے امیبیا کے باعث ہونیوالی یہ دوسری موت ہے۔ انہوں نے انتقال کر جانیوالے پہلے مریض کا نام بتانے سے گریز کرتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ سال اس مرض سے 5 اموات ہوئی تھیں۔

نیگلیریا فاؤلیری سے آلودہ پانی

نیگلیریا کا نیا کیس رپورٹ ہونے کے بعد ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز نے انتظامیہ کو حکم دیا کہ ان تمام علاقوں سے پانی کے سیمپل لئے جائیں جہاں جہاں 26 مئی کو متاثرہ شخص گیا تھا۔

محمد علی کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ وہ پورا دن گھر پر تھا اور 15 مئی کو انتقال کر جانیوالے اپنے والد کی تعزیت کیلئے آزاد کشمیر سے آنیوالے عزیزوں کو چھوڑنے کیلئے کینٹ اسٹیشن گیا تھا، جہاں اس نے وضو کے بعد نماز ادا کی تھی۔

تحقیقاتی ٹیم نے اس کے بعد قائد آباد کی گلستان سوسائٹی سے پانی کے نمونے حاصل کئے، جہاں محمد علی رہائش پذیر تھا، جبکہ کینٹ اسٹیشن سے بھی نمونے حاصل کرکے ٹیسٹ کیلئے کراچی واٹر اور سیوریج بورڈ کو بھجوادیئے گئے۔

چار مقامات محمد علی کے گھر میں پانی کی ٹینک، سوسائٹی کی جامع مسجد ابو ہریرہ، جامع مسجد غریب نواز کینٹ اسٹیشن اور پلیٹ فارم پر واقع مسجد سے پانی کے نمونے حاصل کئے گئے۔

کراچی واٹر بورڈ کے چیف کیمسٹ یحییٰ وسیم قریشی کے مطابق کینٹ اسٹیشن سے حاصل کئے گئے پانی کے نمونوں میں کلورین کی مقدار مقررہ حد سے کم پائی گئی۔

رپورٹس کے مطابق پانی کے نمونوں میں کلورین کی سطح یہ تھی۔

  • محمد علی کے گھر کا ٹینک : 144 پی پی ایم
  • جامع مسجد ابوہریرہ : 186 پی پی ایم
  • جامع مسجد غریب نواز کینٹ : 130 پی پی ایم
  • پلیٹ فارم کی مسجد : 128 پی پی ایم

پاکستان میں نیگلیریا کا پہلا کیس 2008ء میں رپورٹ میں ہوا تھا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ موسمیاتی تبدیلی کے باعث لمبی گرمیاں اور نمی کا ماحول اس امیبیا کی نشو و نما کیلئے بہترین ماحول فراہم کرتا ہے۔

غیر معمولی دماغ

تیس سالہ محمد علی نجی شپنگ کمپنی میں انوینٹری منیجر کے طور پر خدمات انجام دینے کے ساتھ آئی بی ایم میں سیکنڈ ایئر کے طالبعلم بھی تھے اور سپلائی چین مینجمنٹ میں ایم بی اے کی ڈگری حاصل کرنے کے خواہشمند تھے۔

ان کے بھائی کا کہنا ہے کہ ہمارے پورے خاندان کو یقین تھا کہ محمد علی غیر معمولی ذہن رکھتا تھا، ہم اب تک اس بات کو تسلیم نہیں کرپارہے کہ دماغ کو کھاجانیوالے امیبیا نے اس کی جان لے لی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube