Tuesday, October 19, 2021  | 12 Rabiulawal, 1443

ریاست مدینہ کے دعویدار مال پرنہیں اعمال پرتوجہ دیں، شہبازشریف

SAMAA | - Posted: Jun 15, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 15, 2021 | Last Updated: 4 months ago

صدر مسلم لیگ ن اور قومی اسمبلی قائد حزب اختلاف شہاز شریف کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف دور حکومت کے 3 سالوں میں اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں 300 فیصد اضافہ ہوا ہے، ریاست مدینہ کے دعویداروں کو مال کے بجائے اعمال کی طرف توجہ دینی چاہئے۔

قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا کہ اسپیکر قومی اسمبلی ایوان کو چلانے میں ناکام ہوگئے ہیں، جس سے ایوان کا تقدس مجروح ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ریاست مدینہ کے دعویداروں کو ریاست مدینہ کی معیشت کا مطالعہ کرکے مال کے بجائے اعمال کی طرف توجہ دینی چاہئے۔

شہباز شریف نے کہا کہ 2018ء میں ہماری جی ڈی پی گروتھ 5.8 فیصد تھی مگر عمران خان کے مسلط ہونے کے دو سال بعد جی ڈی پی 2.1 پر پہنچ گئی جو 1952ء کے بعد کم ترین شرح تھی۔

قائد حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ عوام روٹی کو ترس گئے ہیں جبکہ سرکاری ملازمین بھی شدید مشکلات کا شکار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے ایک کروڑ نوکریوں کا وعدہ کیا تھا مگر نوکریاں دینے کے بجائے 50 لاکھ مزید لوگوں کو بے روزگار کردیا گیا، قوم پوچھ رہی ہے کہ وہ 50 لاکھ گھر کہاں ہیں؟ جس کا عمران خان نے وعدہ کیا تھا۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ وہ 300 ارب ڈالر کہاں ہیں جس کے واپس لانے کا حکومت نے وعدہ کیا تھا، انہوں نے کہاں کہ اس وقت ملک میں بدترین کرپشن جاری ہے اور کوئی جائز کام بغیر رشوت کے نہیں ہوتا۔

اپوزیشن لیڈر نے یہ بھی کہا کہ 3 سالوں میں بے روزگاری میں 15 فیصد اضافہ جبکہ مہنگائی کی شرح 16 فیصد پر پہنچ گئی ہے۔

شہباز شریف کے خطاب کے دوران تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی کے شور شرابے کے باعث اسپیکر نے اجلاس 20 منٹ کیلئے ملتوی کیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube