Monday, October 18, 2021  | 11 Rabiulawal, 1443

فوادچوہدری کاسپریم کورٹ سےسندھ میں آرٹیکل140کےنفاذکامطالبہ

SAMAA | - Posted: Jun 13, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 13, 2021 | Last Updated: 4 months ago

نوازشریف،اسحاق ڈار،حسن نوازبھی اوور سیزپاکستانی ہیں

فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ سندھ بے اختیار ہیں۔ اہم فیصلے وزیراعلیٰ ہاؤس نہیں، بلاول ہاؤس میں ہوتے ہیں۔ سندھ میں اس وقت آرٹیکل140اےلاگو کرنے کی ضرورت ہے۔

کراچی آمد پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ سندھ سمیت صوبوں کو نیشنل فنانس کمیشن کے ذریعے پیسہ آتا ہے اس کے باوجود سندھ میں تعصب پھیلایا جاتا ہے، صوبے کو این ایف سی کی مد میں ملنے والا پیسہ کہاں جا رہا ہے۔ وفاقی حکومت نے کے الیکٹرک کو 500 میگا واٹ اضافی بجلی فراہم کی۔

انہوں نے کہا کہ آئین میں گورنر راج کی گنجائش نہیں، سندھ حکومت نے پولیس موبائلز صرف پروٹوکول کیلئے رکھی ہیں، سندھ پولیس میں جرائم سے نمٹنے کی اہلیت نہیں۔ وفاق سے بدین اور گھوٹکی کیلئے اسپیشل فنڈز لیے جاتے ہیں، لاڑکانہ میں سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔ صحت کا نظام تباہ ہو چکا، من پسند ٹھیکہ داروں کو ٹھیکے دے کر کب تک سندھ کو چلایا جائے گا۔ سب سےزیادہ پلی بارگین کے کیسز سندھ کے ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات کا یہ بھی کہنا تھا کہ لوگ مطالبہ کرتے ہیں سندھ میں گورنر راج لگادیں، لیکن آئین میں اس کی کوئی گنجائش نہیں ، آرٹیکل 140اے کا نفاذ ہی واحد راستہ ہے جس کے ذریعے سندھ کو اس کا حق مل سکتا ہے۔

بجٹ سے متعلق وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اس سال گندم، چاول اور مکئی کی ریکارڈ فصل ہوئی۔ موبائل ڈیٹا اور کالز پر ٹیکس کو مسترد کر دیا گیا، حکومت نے چھوٹی گاڑیوں کی قیمت میں بھی کمی کی۔

فواد چوہدری کے مطابق ن لیگی رہنما احسن اقبال کہتے ہیں اوورسیز پاکستانیوں کو ملکی مسائل کاعلم نہیں، آج کل نواز شریف، اسحاق ڈار، حسن نواز بھی اوور سیز پاکستانی ہیں۔ ن لیگ نے آنکھیں بند کر کےانتخابی اصلاحات کو مسترد کیا، اوور سیز پاکستانی ملک سے پیسہ نہیں لے کر جاتے بلکہ باہر سے بھیجتے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube