Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

زبیرعمر ترسیلات زر میں اضافےپر حکومتی کارکردگی کے معترف

SAMAA | - Posted: Jun 10, 2021 | Last Updated: 4 months ago
Posted: Jun 10, 2021 | Last Updated: 4 months ago

مسلم لیگ ن کے رہنما اور سندھ کے سابق گورنر محمد زبیرعمر کا کہنا ہے کہ ترسیلات زر میں 50 فیصد اضافہ ہوا ہے جس کا کریڈٹ پی ٹی آئی حکومت کو بلکل دوں گا تاہم یہ یکلخت نہیں ہوا بلکہ ہمارے دور حکومت میں ہونے والے 30 فیصد اضافے کا تسلسل ہے۔
سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفتگو کرتے ہوئے زبیرعمر کا کہنا تھا کہ ترسیلات زر بڑھنے کی اہم وجوہات کرونا صورتحال، بیرون ممالک سفری پابندیاں اور حج اور عمرے پر لوگوں کا نہ جانا بھی ہیں۔
رہنما ن لیگ کا کہنا ہے کہ ایکسپورٹ 8 سال پہلے والی پوزیشن پر ہے جسے 3 سال میں بڑھنا چاہیے تھا جو نہیں ہوا جبکہ ٹیکس محصولات میں بھی اضافہ نہ ہونے کے برابر ہے۔
زبیرعمر کا کہنا تھا کہ حکومت بری معاشی صورتحال کی وجہ کرونا قرار دے رہی ہے مگر پچھلی حکومتوں میں بھی زلزلے اور سیلاب جیسے حالات پیش آتے رہے ہیں اور جب ہم حکومت میں آئے تھے اس وقت روز بم دھماکے بھی ہورہے تھے۔
انہوں نے کہا کہ 3 سال میں نجکاری سے متعلق صفر فیصد کام ہوا ہے جبکہ خود موجودہ وزیرخزانہ پہلے پی ٹی آئی حکومت کے بارے میں کہتے رہے ہیں کہ اس نے معیشت کا بیڑہ غرق کردیا ہے۔
زبیرعمر کا کہنا تھا کہ عمران خان نے قرضوں سے متعلق کمیشن کا اعلان کیا تھا مگر ابھی تک اس کی رپورٹ نہیں آئی اور نہ ہی کبھی آئے گی۔
انہوں نے کہا کہ یہ سن 2023 کی بات کررہے ہیں مگر پہلے 2021 کے ضمنی الکشن کے نتائج تو دیکھ لیں جس میں انہیں چاروں صوبوں میں شکست ہوئی، دوسری بار حکومت میں آنے کے بیانات ان کی خوش فہمی ہے۔
رہنما ن لیگ کا کہنا تھا کہ خبروں سے ایسا لگ رہا ہے کہ امریکا کو افغان مسئلہ پر سپورٹ کرنا انتہائی خطرناک ہے اس معاملے کو پارلیمنٹ میں لانا چاہیے اور یہ بتانا چاہیے کہ حکومت کی امریکا سے کیا بات چیت ہورہی ہے۔
پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر شبلی فراز کا کہنا تھا کہ ہماری کارکردگی کو کرونا کے تناظر میں دیکھنا پڑے گا ہماری آئی ٹی ایکسپورٹ میں بہتری ہوئی۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ ہمیں مجموعی ایکسپورٹ بڑھانے کی ضرورت ہے۔
شبلی فراز کا کہنا تھا کہ پاکستان زرعی ملک ہے ہمیں باہر سے کھانے پینے کے اشیاء کی امپورٹ کو روکنا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ ملک ادارے چلاتے ہیں جو کافی عرصے سے غیرفعال تھے ہم انہیں بھی ٹھیک کررہے ہیں اور بے روزگاری کے مسائل پر بھی کام کررہے ہیں۔
شبلی فراز کا کہنا تھا کرونا کی وجہ سے دنیا بھر کی معیشت تنزلی کا شکار ہے خطے کے تمام ممالک کی جی ڈی پی گروتھ منفی میں ہے جبکہ ہماری گروتھ 4 فیصد پر پہنچ چکی ہے۔ ن لیگ دور حکومت کی جی ڈی پی گروتھ درآمدات پر مبنی تھی جو دیرپا ثابت نہیں ہوئی۔
انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ کے رہنما کہہ رہے ہیں کہ ہمیں آئی ایم ایف کے پاس جلدی جانا چاہیے تھا جس کا مطلب یہ ہے کہ انہیں علم تھا کہ پی ٹی آئی حکومت کو ایک بیمار معیشت ملی ہے۔
شبلی فراز کا کہنا تھا کہ ہم نے اداروں میں اصلاحات کی ہیں جس کی وجہ سے ہمیں مشکل صورتحال سے گزرنا پڑا جبکہ مسلم لیگ حکومت نے سڑکوں پر پیسے لگا کے انڈسٹری کو تباہ کردیا تھا۔
انہوں نے کہا کہ انہوں نے ساہیوال کے زرعی علاقے میں پاورپلانٹ لگایا جس کے لیے کوئلہ کراچی سے جانا تھا اس سے زیادہ نااہلی کیا ہوسکتی ہے۔
شبلی فراز کا کہنا تھا کہ ہم نے ملک کی بہتری کے لیے فیصلے کیے ہیں سیاسی فائدے کے لیے نہیں۔
رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ اگلا الیکشن بھی ہم ہی جیتیں گے کیوں کہ ہمارے مدمقابل اپوزیشن نااہلوں کا ٹولہ ہے وہ جو عوام کے سامنے نہیں جاسکتا بس صرف ٹی وی پر نظر آسکتا ہے۔
شبلی فراز کا کہنا تھا کہ پنجاب کے ضمنی الیکشن میں تمام سیٹوں پر سن 2018 کے مقابلے میں ہمارے ووٹ بینک میں اضافہ ہوا ہے۔
امریکا کو فوجی اڈے دینے سے متعلق خبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے شبلی فراز کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے وزیرخارجہ پارلیمنٹ میں واضح بیان دے چکے ہیں اور ہماری افغان پالیسی اس سے پہلے کبھی اتنی واضح نہیں تھی جتنی آج ہے۔
شبلی فراز کا کہنا تھا کہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کریں گے جبکہ ترقیاتی فنڈز، ڈیمز اور سی پیک منصوبوں کے لیے مختص رقوم میں اضافہ کریں گے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube