Wednesday, July 28, 2021  | 17 Zilhaj, 1442

پاکستان کے پاس 2023ء میں 50فیصد اضافی بجلی ہوگی، حماداظہر

SAMAA | - Posted: Jun 8, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 8, 2021 | Last Updated: 2 months ago

 

وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر کا کہنا ہے کہ پاکستان کے پاس 2023ء میں ضرورت سے 50 فیصد زائد بجلی ہوگی۔

وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے ن لیگ حکومت پر ایک بار پھر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کیا نظام کے بگاڑ کا ذمہ دار عمران خان ہے؟، کیا عمران خان کی حکومت نے بجلی کے مہنگے معاہدے کیے؟۔

ان کا کہنا ہے کہ 2023ء میں ہمارے پاس ضرورت سے 50 فیصد زیادہ بجلی ہوگی، کراچی میں لوڈشیڈنگ میں کمی ہوگئی۔

حماد اظہر نے تسلیم کیا کہ خیبرپختونخوا میں کچھ فیڈرز پر 80 فیصد لوگ بجلی کا بل نہیں دے رہے۔ انہوں نے کہا کہ زیادہ چوری والے علاقوں ميں اے بی سی کیبلز لگائیں گے۔

ٹویٹر پر شہباز شریف کی جانب سے مختلف شہروں اور دیہات میں لوڈ شیڈنگ سے متعلق پیغام پر جواب دیتے ہوئے حماد اظہر نے کہا کہ آپ کی محنت صرف مہنگے بجلی کے سودے کرنے میں تھی، نہ کھپت کا سوچا اور نہ ہی ٹرانسمیشن کے فرسودہ نظام پر انویسٹ کیا۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کی حکومت اب بجلی گھروں سے کئے گئے معاہدے درست بھی کررہی ہے اور ٹرانسمیشن میں سب سے زیادہ سرمایہ بھی لگارہی ہے۔

دوسری جانب وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر سے کے الیکٹرک کے سی ای او مونس علوی نے بھی ملاقات کی۔ کے الیکٹرک کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق سی ای او کے الیکٹرک نے کراچی میں بجلی کی صورتحال پر وفاقی وزیر کے بروقت اقدامات کو سراہا، شہر قائد می پالیسی لوڈ شیڈنگ سے متعلق تفصیلات سے بھی آگاہ کیا گیا۔

کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ وفاقی وزیر کے قابل تجدید توانائی منصوبوں کے وژن پر عمل پیرا ہیں، وفاقی وزیر  اور حکومت پاکستان کے توانائی کے شعبے میں پُرعزم اقدامات سے ملكی معشیت پر دور رس مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube