گھوٹکی ٹرین حادثہ: جاں بحق افراد کی تعداد 66ہوگئی

SAMAA | - Posted: Jun 8, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 8, 2021 | Last Updated: 2 months ago

فوٹو: ٹوئٹر

گھوٹکی کے ريتی ريلوے اسٹيشن کے ریل گاڑی کے حادثے میں جاں بحق افراد کی تعداد 66 ہوگئی۔ حادثے میں 100 سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر کے مطابق مرنے والوں میں 19 خواتین اور 16 بچے بھی شامل ہیں۔

ڈپٹی کمشنر عثمان عبد اللہ نے تصدیق کی ہے کہ گھوٹکی ٹرین حادثے میں اب تک 63 افراد جاں بحق ہوئے ہیں جبکہ 10 زخمی مسافروں کی حالت تشویشناک ہے۔ حادثے کا شکار ہونے والی متاثرہ بوگیوں کو ٹریک سے ہٹادیا گیا ہے جبکہ ٹریک کی بحالی کا کام کیا جارہا ہے۔

ترجمان ریلوے کا کہنا ہے کہ گھوٹکی ٹرین حادثے کے بعد ریسکیو آپریشن تقریبا مکمل کرلیا گیا ہے، جاں بحق اور زخمی افراد کی حتمی فہرست جلد جاری کردی جائے گی۔

ترجمان ریلوے کا کہنا ہے کہ ریسکیو آپریشن کے دوران ریلوے انتظامیہ اورافسران بھی ڈیوٹی پر معمور رہے جبکہ چیئرمین ریلوے اور سی ای او ریلوے، وفاقی وزير کے ہمراہ تھے۔ وزیر ریلوے اعظم سواتی نے گزشتہ روز ريليف آپريشن کی مکمل نگرانی کی۔

گھوٹکی:مسافر ٹرینیں آپس میں ٹکراگئیں، 40افراد جاں بحق

گزشتہ روز کراچی سے سرگودھا جانے والی ملت ايکسپريس کی 4 بوگياں ٹريک سے اترگئیں تھی جبکہ ڈی ایس ریلوے سکھر کے مطابق ٹرین حادثے میں 14 بوگیاں متاثر ہوئیں جبکہ 3 مکمل طور پر تباہ ہوئیں،9 بوگیاں ملت ایکسپریس کی حادثے میں متاثر ہوکر پٹڑی سےاتریں۔

پاکستان ریلوے کی ترجمان نازیہ جبین نے بتایا کہ ٹرین حادثہ صبح 4 بجے پیش آیا۔ مقامی انتظامیہ نے کافی حد تک امدادی کاموں کو مکمل کیا ہے اور مزید کاموں کے لیے ہیوی مشینری منگوالی ہے۔

گھوٹکی ٹرین حادثے میں کی معلومات حاصل کرنے کےلیے ریلوے حکام نے نمبرز جاری کیے گئے ہیں جہاں سے معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔

ڈہرکی ریل گاڑی حادثہ،جاں بحق افرادکی تعداد48ہوگئی،200 زخمی

فیصل آباد سے 0419200488اور 03334805996، راولپنڈی سے 0519270834، روہڑی اور سکھر سے 0715813433، 0719310087 جبکہ کراچی سے 03003754200 ان نمبرز پر رابطہ کیا جاسکتا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube