Thursday, September 23, 2021  | 15 Safar, 1443

میرے بعد مجھ سے بہتر ادیب رضوی ہونگے، ڈاکٹر ادیب

SAMAA | - Posted: Jun 5, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 5, 2021 | Last Updated: 4 months ago

تنہائی میں اللہ سے اپنے گناہوں کی معافی مانگتا ہوں

پاکستان کے نامور ڈاکٹر ادیب رضوی  کا شمار اپنے شعبے کے ماہر ترین ڈاکٹرز میں ہوتا ہے ۔ انھوں نےگردوں کے لاکھوں مریضوں کا مفت علاج کیا اور ہزاروں ٹرانس پلانٹ بھی کیے۔

سماء کو خصوصی انٹرویو میں ڈاکٹر ادیب رضوی نے بتایا کہ کرونا سے بچاؤ گردوں کےمریضوں کےلیے بے حد ضروری ہے کیوں کہ ان کو فوری انفیکشن کا خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔ گردوں کے مریضوں کو ڈائلیسز کروانا پڑتا ہے اور اس لیے احتیاط بہتر ہے۔

ذاتی زندگی سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ تنہائی میں اللہ سے اپنے گناہوں کی معافی مانگتا ہوں۔ فوج میں جانے کی خواہش تھی لیکن خواب پورا نہ ہوسکا۔انھوں نے تسلیم کیا کہ بہت سے فیصلوں میں وہ رکاوٹ ثابت ہوتے ہیں،اس لیے ان کے بعد مزید اچھے ڈاکٹرز آئیں گے۔

ادیب رضوی کا یہ بھی کہنا تھا کہ زمانہ طالبعلمی میں سیاست کی تھی لیکن سیاست لفظ ہی گندا ہے۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ اتنا بھوکا رہتا ہوں کہ ہر چیز کی خواہش کرلیتا ہوں۔ یہ جانچ نہیں سکتا کہ کس چیز کی خواہش کم ہے اور کس کی زیادہ ہے۔انھوں نے بتایا کہ وہ اپنے اساتذہ کو کبھی نہیں بھولے اور ان کو ہمیشہ عزت اور احترام دیا۔

ڈاکٹر ادیب رضوی نے بتایا کہ حادثات میں ہزاروں جانیں چلی جاتی ہیں۔ اگر ان افراد کے گردے مریضوں کو عطیہ کردئیے جائیں تو کئی جانیں بچائی جاسکتی ہیں اور مریضوں کو ڈائلیسز بھی نہیں کروانا پڑے گا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube