کراچی، حیدرآباد کے تاجروں کا ٹیکس معاف کیاجائے، متحدہ کامطالبہ

SAMAA | - Posted: Jun 1, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 1, 2021 | Last Updated: 2 months ago

نئے صوبوں کی بات کوغداری کہناغلط ہے، ڈاکٹرخالد مقبول صدیقی

ایم کیو ایم پاکستان نے کراچی اور حیدرآباد کے تاجروں کا ٹیکس معاف کرنے کا مطالبہ کردیا۔ ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا کہنا ہے کہ کراچی میں پیپلزپارٹی کا کوئی اختیار نہیں، شہر کو پی پی پی کی غلامی سے نجات دلائیں گے، نئے صوبوں کی بات کو غداری کہنا غلط ہے، کراچی شہر کو ڈاکوؤں اور رشوت خوروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے سندھ کی حکمران جماعت پیپلزپارٹی کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی ترقی کرتا ہے تو پورا ملک ترقی کرتا ہے، کراچی اور حیدرآباد میں تاجروں کیلئے ٹیکس معاف کئے جائیں، شہر کو مورچہ و محاذ بناکر اس پر پاکستان کیخلاف جنگ لڑی جارہی ہے، اب ٹیکس دینے کی اس شہر کی باری ختم ہورہی جب تک باقیوں کی باری نہ لگائی جائے، یہاں کا ایک ایک علاقہ ملک کے پورے پورے شہروں سے زیادہ سیلز ٹیکس دے رہا ہے۔

ایم کیو ایم رہنماء نے دعویٰ کیا کہ کراچی میں پیپلزپارٹی کے کوئی اختیارات نہیں، سندھ حکومت نے کراچی کا برا حال کردیا ہے،کراچی کو پیپلزپارٹی کی غلامی سے آزادی دلائیں گے، یہاں نہ کوئی آئین ہے، نہ قانون ہے، شہر کو ڈاکوؤں، لٹیروں اور رشوت خوروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے، اس شہر کے پاس صرف ایک آپشن ’’مزاحمت‘‘ کا چھوڑا ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے مزید کہا کہ صوبوں کی بات کو غداری کہنا غلط ہے، کورٹ فیصلہ نہیں کرے گی تو روڈ فیصلہ کرے گا، پیپلزپارٹی سے مطالبہ کرکے ہم ایک قوم کی حیثیت سے اپنی تضحیک کررہے ہیں، ان سے مطالبہ نہیں انہیں متنبہ کرنے کی ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ کراچی میں مختلف مقامات اور گاڑیوں پر نئے صوبے سے متعلق بینرز آویزاں کئے گئے ہیں، جس میں جنوبی سندھ کو الگ صوبہ بنانے کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔

متحدہ قومی موومنٹ کے کنوینر کا کہنا ہے کہ آج سب سے امن پسند طبقہ مزاحمت کی بات کررہا ہے، وزیراعظم پاکستان سے بھی کہوں کہ اگر مصلحت پسندی اور بزدلی کی چادر نہ اتاری تو یہ شہر آپ کو معاف نہیں کرے گا، آپ کے پاس اس سے کا مینڈیٹ ہے اگر آپ اس کو بچا نہ سکے تو تاریخ آپ کو مجرم کہے گی۔ انہوں نے سوال کیا کہ گورنر راج کا آپشن آئین میں کیوں درج ہے؟، اور کب استعمال کرنا ہے؟۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube