Thursday, August 5, 2021  | 25 Zilhaj, 1442

وزیراعظم آج عوام سے ٹیلیفون پر بات چیت کرینگے

SAMAA | - Posted: May 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: May 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago
imran-khan

فوٹو: عمران خان/فیس بک

پی ٹی آئی سینیٹر فیصل جاوید کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان آج  30 مئی بروز اتوار کو براہ راست ٹیلی فون پر عوام کے سوالات کے جواب دیں گے۔

مائیکرو بلاگنگ سائٹ پر پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی) کے سینیٹر فیصل جاوید خان نے بتایا کہ وزیراعظم دوپہر 3 بجے براہ راست فون پر عوام کے مسائل سنیں گے۔

سینیٹر فیصل جاوید کے مطابق وزیراعظم کی عوام سے گفتگو میڈیا پر براہ راست نشر کی جائے گی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل 3 بار وزیر اعظم عمران خان عوام سے ٹیلیفونک رابطہ کر چکے ہیں۔ ٹیلی فون پر براہ راست گفتگو بیک وقت ریڈیو، اور ٹیلی ویژن پر نشر کی گئی۔

عوام سےرابطہ:معاشرے میں فحاشی پھیلنے سےزیادتی کےواقعات بڑھے

 یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل بھی مختلف حکومتوں کے ادوار میں صدور اور وزرائے اعظم کی جانب سے عوام سے براہ راست رابطے کیے گئے تھے۔

سابق صدر پرویز مشرف

سابق صدر پرویز مشرف بھی 2007 میں ایوان صدر میں عوامی نشستیں کر چکے ہیں جنہیں ٹی وی پر براہ راست نشر کیا جاتا تھا۔ اس وقت کے پی ٹی وی نیوز ڈائریکٹر راجہ  مصدق کا کہنا ہے کہ جنرل مشرف ہر طرح کے سوالوں کا جواب دیتے تھے اور اپنے اسٹاف کو بھی ہدایت کر رکھی تھی کہ اگر سخت سوال بھی آجائے تو پی ٹی وی پر اسے سنسر کرنے کے لیے دباو نہ ڈالے۔

سابق وزیراعظم گیلانی

سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے 2011 سے ہر مہینے کی پہلے تاریخ کو ٹیلی فون پر براہ راست عوامی مسائل سننے کا سلسلہ شروع کیا جسے پی ٹی وی پر نشر بھی کیا جاتا تھا۔

نواز شریف

سال 98-1997 میں نواز شریف نے عوام سے ٹیلیفونک رابطے کا سلسلہ شروع کیا تھا اور اس وقت ٹال فری نمبر عوام کو فراہم کیا گیا تھا، جس کے ذریعے لوگ رابطے کرتے اور ان کے مسائل حل کرنے کے لیے احکامات جاری کیے جاتے تھے۔ وہ ہفتے کے دن فون کال پر لوگوں کے مسائل سنتے تھے۔

ذو الفقار علی بھٹو

سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کے دور میں کھلی کچہریاں باقاعدگی سے منعقد کی جاتیں تھیں جو عوامی رابطے کا سب سے موثر ذریعہ تھیں۔

ضیا الحق

ضیا الحق چونکہ عوامی نمائندے نہیں تھے تو وہ براہ راست کوئی ٹیلیفونک رابطے نہیں کیا کرتے تھے لیکن وہ رات گیارہ بجے سے ایک بجے تک ٹیلیفون کے ذریعے موصول ہونے والے پیغامات یا سوالات کے جواب دیا کرتے تھے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube