سندھ میں کرونا وائرس سے متعلق پابندیاں جاری رکھنے کا فیصلہ

SAMAA | - Posted: May 27, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: May 27, 2021 | Last Updated: 2 months ago

سندھ کی صوبائی ٹاسک فورس نے کرونا وائرس سے متعلق پابندیاں جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

جمعرات کو کراچی میں وزیراعلیٰ سندھ کی زیرِصدارت صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا۔ وزیراعلی سندھ کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ سختی کرنے سے کیسز کی شرح کم ہوئی۔ وزیراعلی سندھ نے کہا کہ عوام کے تعاون سے کرونا کے پھیلاؤ کو روک سکیں گے۔بدھ کو صوبے میں 24 اموات رپورٹ ہوئی ہیں اور یہ پریشان کن ہے۔

انھوں نے بتایا کہ کراچی کے کیسز کی شرح آٹھ اعشاریہ 34 فیصد ہے۔ حیدرآباد چار اعشاریہ 42 فیصد اور دیگر اضلاع  تین اعشاریہ 3 فیصد ہیں۔ 20 مئی کو کراچی میں بارہ اعشاریہ 86 فیصد، حیدرآباد میں گیارہ فیصد شرح تھی۔ ضلع شرقی 17، وسطی 10، جنوبی 13،غربی 10 اور ملیر میں 8 فیصد کیسز ہیں۔

عید کے بعد مئی کی 15 سے 21 تاریخ تک کیسز آٹھ اعشاریہ 63 فیصد تھے۔اس دوران اموات ایک اعشاریہ 18 فیصد تھیں۔ عید کے بعد دوسرے ہفتےمیں 22 مئی سے 26 مئی تک چھ اعشاریہ 8فیصد تھی اور اموات کی شرح صفر اعشاریہ 9 فیصد رہی ۔ سندھ میں صرف مئی میں 307 مریض انتقال کرگئے۔

ترجمان سندھ حکومت مرتضی وہاب نے بھی کرونا وائرس کی موجودہ صورتحال پر ٹوئٹ کرتےہوئے شہریوں سے مزید تعاون جاری رکھنے کی اپیل کی ہے اور کہا ہے کہ ہر فرد ویکسنیشن کرا کر اپنی ذمہ داری ادا کرے۔

پاکستان میں کرونا ویکسینیشن کے لیے 19 سال سے زائد عمر کے افراد کی رجسٹریشن آج سے شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔این سی او سی کے سربراہ اسد عمر کے مطابق اس اقدام سے ملک بھر میں طبی ماہرین کی جانب سے ویکسینیشن کے لیے مقررہ آبادی کی رجسٹریشن ممکن ہوجائے گی۔

جمعرات کو این سی او سی نے بتایا ہے کہ کرونا وائرس کے باعث سب سے زیادہ پنجاب اور سندھ میں 24، 24 اموات ریکارڈ کی گئیں۔ خیبرپختونخوا میں 19 اموات، بلوچستان میں 2، اسلام آباد اور آزاد کشمیر میں 3، 3 مریضوں کا وائرس کے باعث انتقال ہوا۔ ملک میں کرونا سے مجموعی اموات کی تعداد 20 ہزار 540 ہو گئی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube