پاکستان  میں بننے والی کرونا ویکسین اگلے ہفتے لانچ ہوجائیگی،نوشین حامد

SAMAA | - Posted: May 25, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: May 25, 2021 | Last Updated: 2 months ago

پارلیمانی سیکرٹری صحت ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا ہے کہ پاکستان میں چین کے اشتراک سے بننے والی کرونا ویسکین کی ایک دو روز میں ڈریپ سے منظوری لے کر اگلے ہفتے لانچ کردی جائے گی۔

سماء کے پروگرام سات سے آٹھ میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا تھا کہ مذکورہ ویکسین کی کوالٹی ٹیسٹنگ کا عمل مکمل ہوچکا ہے اور اسے تمام مروجہ طریقہ کار سے گزارا جاچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اب پاکستان میں بھی کرونا ویکسین بنائی جائے گی اور ڈریپ کی منظوری کے بعد ایک بڑے ایونٹ کے دوران اس کی لانچنگ ہوگی۔

ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا تھا کہ لانچنگ کے موقع پر ہی کچھ لوگوں کو وہ ویکسین لگائی جائے گی ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ ویکسین بہت فائدہ مند ہے اور کرونا ہونے کی صورت میں بھی مریض کو زیادہ نقصان نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ چین کے ماہرین ہمارے ساتھ موجود ہیں اور ویکسین کی تیاری کا سارا کام ان کی نگرانی میں جاری ہے۔

ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا تھا کہ یہ ویکسین ٹرانسپورٹ کرنے میں بھی آسان ہے اور باقی ویکسین کی طرح یہ بھی فائدہ مند ہے تاہم ہر ویکسین کا طریقہ کار مختلف ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ ویکسین اس طریقے سے تیار ہوئی ہے کہ اس میں اینٹی باڈیز پہلی ڈوز کے بعد تیار ہونا شروع ہوجاتی ہیں۔

ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا تھا کہ اس ویکسین کی پہلی کھیپ میں ایک لاکھ 24 ہزار خوراکیں تیار ہوچکی ہیں اور اگلے مہینے تک مزید 9 لاکھ ڈوزز آ جائیں گی جبکہ معاہدہ کل 30 لاکھ ڈوزز کا طے پایا ہے۔

ڈاکٹر نوشین کا کہنا تھا کہ یہ وہ ویکسین ہے جس کے کلینکل ٹرائل پاکستان میں کامیابی سے ہوئے تھے اس لیے یہ کمپنی کی اخلاقی ذمہ داری تھی کہ وہ پاکستان کو نہ صرف ترجیحی بنیادوں پر ویکسین فراہم کرے بلکہ ٹیکنالوجی بھی ہمارے ساتھ شیئر کرے۔

انہوں نے کہا کہ اس ویکسین کی منظوری کے لیے ڈبلیو ایچ او کو درخواست دی جا چکی ہے جبکہ ایک یورپی ملک ہنگری نے بھی اس کی منظوری دیدی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube