Tuesday, September 28, 2021  | 20 Safar, 1443

ریلوے چلانے کی استطاعت ہم میں نہیں، وزیر ریلوے

SAMAA | - Posted: May 24, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: May 24, 2021 | Last Updated: 4 months ago
Azam Swati

فوٹو: آن لائن

وزیر ریلوے اعظم سواتی نے اعتراف کیا ہے کہ ریلوے چلانے کی استطاعت ہم میں نہیں لیکن ریلوے کو قطعاً پرائیوٹائز نہیں کیا جا رہا۔  

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے اعظم خان سواتی نے دعویٰ کیا کہ ریلوے 50 سال بعد منافع بخش ادارہ بن چکا ہے۔ میرے پانچ ماہ گزر گئے اور اس دوران ریلوے جیسے ادارے کو بحال کرنا بہت بڑا کام ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ریلوے کو بطور بزنس انٹرپرائزر چلانے کے لیے ایک بہت بڑا نقشہ کھینچا ہے اور پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ کے تحت آوٹ سورس ہوں گے۔ مزدور بھی خوش ہوگا اسکو بہترین تعلیم اور رہائش کی سہولیات ملیں گی۔

انہوں نے کہا 6 سے 9 ماہ تک پاکستان ریلوے بھاری نقصان سے باہر نکل آئے گا۔ ہم پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت ٹرئینیں چلائیں گے، تمام بوگیوں کو اس منصوبے سے نیلام کر دیں گے، نقصان پر چلنے والے ٹرینیں کیسے خسارے میں چلائیں۔

وزیر ریلوے نے کہا کہ ملازمین کو مستقل نہیں کرنے جا رہا کیوںکہ میں سیاست نہیں کر رہا اور واضح کر رہا ہوں کسی ملازم کو مستقل نہیں کیا جائے گا۔ عوام کتنی خوش ہوگی کہ وزیراعظم عمران خان کے دور میں ریلوے خسارے سے منافع میں چلا گیا۔

اعظم سواتی نے کہا کہ ایک لاکھ 32ہزار لوگوں کو ریلوے سے پینشن ادا ہوتی تھی۔ وزیراعظم اور فنائنس منسٹر نے پینشن کے لیے ایک الگ اکاؤنٹ مختص کر دیا ہے۔ ملازمین کے لیے 150 کالونیوں سے متعلق وزیراعظم کو سفارشات دے دی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ریلوے چار فیصد فریٹ اٹھاتا تھا لیکن اب انشاء اللہ 10 فیصد تک جائیں گیے۔ روڈ سے فریٹ کا بوجھ ریلوے پر شفٹ کرنے جا رہے ہیں، کراچی سے افغانستان سرحد تک کینٹینر کو ٹرین کے ذریعے پہنچایا جائے گا۔ کینٹینرز جو بھی لے گا وہ سال تک اسکا مالک ہوگا۔ کینٹیرز کے لیے سیل بنایا گیا ہے اور اس کے تحت ہی دیے جائیں گیے۔

وزیر ریلوے نے کہا کہ پاکستان ریلوے کی قیمتی ترین زمین سے 70سالوں میں زیرو اِنکم ہے۔ ریلوے کے افسران اور ریلوے کی پولیس نے لوگوں کیساتھ مل کر قبضہ کروائے ہیں۔ رائل پام کلب پر قبضہ مافیا کا قبضہ تھا جس پر سے سپریم کورٹ نے قبضہ واگزار کروایا اور رائل پام کلب خسارے سے منافع میں بدل گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ایم ایل ون منصوبے کے حوالے سے چینی سفیر سے مل رہے ہیں، ایم ایل ون منصوبے کی بڈنگ کی طرف جا رہے ہیں اور ایم ایل ون منصوبے کا سنگ بنیاد جلد رکھیں گے۔ وزیراعظم عمران خان اور جنرل باجود ایم ایل ون اور سی پیک پر خوشخبری سنائیں گیے۔

وزیر ریلوے اعظم سواتی نے دعویٰ کیا کہ جب تک عمران خان کی حکومت ہے میں ہی ریلوے کا وزیر رہوں گا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube