Thursday, September 16, 2021  | 8 Safar, 1443

شاہ محمود کافلسطینیوں کےتحفظ کیلئےعالمی فورس بنانےکا مطالبہ

SAMAA | - Posted: May 20, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: May 20, 2021 | Last Updated: 4 months ago

فوٹو: ٹوئٹر

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسبمبلی سے فلسطینیوں کے تحفظ کےلیے عالمی فورس بنانے کا مطالبہ کردیا۔

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےاقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل اور فلسطین کے مابین جنگ قابض اور مقبوض کے درميان ہے۔ اسرائیل فلسطینیوں سے کوئی مقابلہ نہیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ غزہ اور مغربی کنارے میں مسلسل اسرائیلی بمباری کےباعث 50ہزار فلسطینی بے گھر ہوچکے ہیں جبکہ غزہ میں پانی اور خوراک کی شدید قلت پيدا ہوچکی ہے۔

غزہ پر اسرائیلی حملے:جنرل اسمبلی کا اجلاس آج ہوگا

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کا فرض ہے کہ فلسطينيوں کی زمين سے اسرائيلی قبضہ فی الفور ختم کرايا جائے۔ انسانيت کے خلاف اسرائيلی جرائم کا محاسبہ ہونا چاہيے اور فلسطينيوں کے تحفظ کيلئے عالمی فورس بننی چاہيے کیونکہ فلسطینوں کے پاس کوئی منظم فوج نہیں۔

اسرائیل کی حمایت، ایپ اسٹورز پر فیس بک کی ریٹنگ گرگئی

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ قوموں کی زندگی میں ایسے مرحلے آتے ہیں جب ان کے فیصلے آنے والی نسلیں یاد رکھتی ہیں۔ ’آج ایک ایسا ہی موقع اور مرحلہ ہمیں درپیش ہے۔ آج ہم جوکرتے ہیں یا نہیں کرتے، سب تاریخ میں لکھا جائے گا‘۔

اسرائیلی حملوں میں ایک ہفتے کے دوران 250 سے زائد فلسطینی شہید جبکہ ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں۔ ان میں سے ایک تہائی تعداد خواتین اور بچوں کی ہے۔ غزہ کے ہر گھر میں اس وقت صف ماتم بچھی ہے اور ہر طرف موت کا سایہ ہے۔

وزیرخارجہ شاہ محمود نے مزید کہا کہ آج پوری دنیا اور اقوام عالمی نقطے پر کھڑا ہے۔ اب وقت آچکا ہے کہ اسرائیل کو خبردار کیا جائے۔

اسرائیلی وزیراعظم نےفلسطینیوں کیخلاف بربریت کااصل مقصد بتادیا

انہوں نے کہا کہ فلسطینی عوام کی آواز کو دبایا نہیں جاسکتا اور نہ ہی انہیں خاموش کرایا جاسکتا ہے۔ ہم اسلامی دنیا کے نمائندے یہاں ان کے حق کی بات کرنےآئے ہیں، آج ہم ان کے لیے بول رہے ہیں کہ یہ خوفناک امر ہے۔ سلامتی کونسل عالمی امن وسلامتی کے قیام کی اپنی بنیادی ذمہ داری انجام دینے کے قابل نہیں۔ سلامتی کونسل جنگ بند کرنے کا مطالبہ کرنے میں بھی ناکام رہی ہے۔

دوسری جانب فلسطین میں جاری اسرائیلی مظالم پر اقوام کے جنرل سيکريٹری اينتونيو گوتريس نے حماس اور اسرائیل سے جنگی بندی کا مطالبہ کیا ہے۔

جنرل سيکريٹری اقوام متحدہ نے دیگر ممالک سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ دنیا دونوں ممالک کے درمیان جنگ بندی کےليے اثرورسوخ استعمال کرے اور غزہ کو جنگ کے دہانے سے واپس لايا جائے۔

اسرائیل کی حمایت: امریکی اسکول ٹیچرنوکری سےفارغ

دوسری جانب ترک وزير خارجہ چاولش اوغلو نے اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے مقدس مقامات سے اسرائيلی قبضہ ختم کرايا جائے اور عالمی قوانين کے مطابق وعدے پورے کيے جائيں جبکہ فلسطينيوں کوتحفظ دينے کےليے عملی اقدامات کيے جائيں۔

غزہ میں بے گناہ مسلمان شہریوں پر اسرائیلی بمباری کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں شہادتوں کی کل تعداد 230 سےتجاوز کرچکی ہے۔

اسرائیلی فضائی حملوں میں صحافی سمیت مزید 4فلسطینی شہید

اب تک کی اطلاعات کے مطابق شہید ہونے والے 230 مظلوم شہریوں میں 64 بچے اور 48 خواتین بھی شامل ہیں۔

قبل ازیں نيتين ياہو نے حملے روکنے سے صاف انکار کرديا ہے جبکہ فلسطین کی مزاحمتی تحریک حماس بھی ہتھیار ڈالنے پر تیار نہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube