شازیہ اسحاق مالاکنڈ کی پہلی خاتون اےایس پی بن گئیں

SAMAA | - Posted: May 12, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: May 12, 2021 | Last Updated: 1 month ago

خیبرپختونخوا کے ملاکنڈ ڈویژن میں اپرچترال ضلع کے گاؤں جونال کوچ مستوج کی رہائشی شازیہ اسحاق اپنےعلاقے کی پہلی اے ایس پی بن گئی ہیں۔

شازیہ اسحاق نے اپنی کامیابی کا راز سخت محنت اور مستقبل مزاجی کو قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے ایک سال تک فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے تحت مسابقتی امتحان کے لئے تیاری کی اور پہلی ہی کوشش میں نہ صرف کامیاب ہوگئیں بلکہ پولیس سروس آف پاکستان میں اپنی پہلی چوائس کو بھی پانے میں کامیاب ہوئیں۔

شازیہ اسحاق نے ابتدائی تعلیم اپنے گاؤں ہی سے حاصل کی اور اعلیٰ تعلیم کیلئے پاکستان کی قدیم درس گاہ اسلامیہ کالج پشاور میں داخلہ لیا۔ انھوں نے وہاں سے بی ایس پالٹیکل سائنس کا امتحان نمایاں نمبروں سے پاس کیا۔ ​شازیہ کی ایک بہن اور دو بھائی ہیں جبکہ ان کے والد رحمت اسحاق پاک آرمی سے صوبیدار ریٹائرہیں۔

شازیہ کا تعلق ایک انتہائی دورآفتادہ اور پسماندہ علاقے سے ہے جہاں بنیادی سہولیات کا فقدان ہے۔ ان کے گاؤں میں بجلی نہ ہونے کے برابر ہے اور انٹرنیٹ کی سہولت بھی نہیں ہے۔شازیہ نے سی ایس ایس کی تیاری کیلئے راولپنڈی کا انتخاب کیا۔

شازیہ نے بتایا کہ سی ایس ایس کا امتحان دینے کے بعد محکمہ تعلیم میں ٹیسٹ دیا اور ان کا انتخاب سرکاری مڈل اسکول میں بطور ایس ایس ٹی ہوا اور وہ اس وقت بطور ہیڈ مسٹریس کام کررہی تھیں۔

شازیہ کا مزید کہنا تھا کہ سی ایس ایس پاس کرنا ان کا ایک جنون تھا جس کو سامنے رکھتے ہوئے سخت محنت کی۔ اس دوران راستے میں رکاوٹیں اور مشکلات بھی آئیں لیکن انھوں نے اس کا مقابلہ کیا۔ شازیہ کا کہنا تھا کہ سی ایس ایس کا امتحان مشکل ضرور ہے مگر انسان محنت کرے تو اللہ تعالیٰ برکت دیتا ہے اور محنت کبھی رائیگاں نہیں جاتی۔

پولیس سروس جوائن کرنے سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ ایک طرف وہ پسماندہ اضلاع کے خواتین کے مسائل حل کرنے میں  معاون ثابت ہونگی اور دوسری طرف ان پسماندہ اضلاع کی خواتین کو ایک حوصلہ ملے گا کہ اگر چترال کےایک پسماندہ گاؤں سے تعلق رکھنے  والی خاتون پولیس سروس میں جا سکتی ہے تو باقی خواتین کو بھی ہمت کرنی چاہئے۔

واضح رہے کہ اس سال چترال  کے دورآفتادہ علاقوں سے 3 اور امیدواروں نے بھی سی ایس ایس کے امتحان میں کامیابی حاصل کی ہے۔ان میں عمران الحق کا پاکستان ایڈ منسٹریٹیوسروس ( پی اے ایس ) ،مجید اللہ فارن سروس آف پاکستان ( ایف ایس پی ) اور سلیم اللہ ایوبی پاکستان اکاؤنٹس اینڈ آڈٹ سروس ( پی اے اے ایس ) شامل ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube