الیکٹرانک ووٹنگ مشین کسی چیز کا حل نہیں،شاہد خاقان

SAMAA | - Posted: May 4, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: May 4, 2021 | Last Updated: 1 month ago

یہ مزید ابہام پیدا کرے گا

لیگی رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین کسی چیز کا حل نہیں ہے اور یہ مزید ابہام پیدا کرے گا۔ جو ملک کاغذی نظام نہ چلا سکے وہ الیکٹرانک بھی نہیں چلا سکتا۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں ایل این جی ریفرنس کی سماعت ہوئی۔ عدالت کے باہر میڈیا سے بات کرتےہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جو لوگ الیکٹرونک ووٹنگ مشینوں کی بات کرتے ہیں وہ عدالتوں میں کیمرے لگائیں اور عوام کو بتائیں کہ اس احتساب کے کیا حقائق ہیں۔

کرونا سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ ملک میں وائرس کی وجہ سے پھرلاک ڈاؤن کا خطرہ ہے۔ یہ وہ ملک ہے جو ایک ویکسین تک نہیں خرید سکا۔

انھوں نے کہا کہ این سی او سی میں اراکین ماسک پہن کرانہماک سے بیٹھے ہوتے ہیں لیکن کیا این سی او سی عوام کو ماسک پہنا سکی ہے۔ کہا گیا ہے کہ اب فوج عوام کو ماسک پہنائے گی، پہلے اس کام کے لیے ٹائیگر فورس تھی۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ طویل اجلاسوں سے کچھ نہیں ہوگا اور فوری طور پر 10 کروڑ ویکسین کا آرڈر دینا چاہئے۔

وزیراعظم عمران خان سے متعلق شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہمارے وزیراعظم عمران خان شہر میں اس مقام کے دورے کے لیے نکلے جہاں قیمتیں کم اور موجود تھیں۔ اس کے بعد وزیراعظم خوش خوش واپس گھر چلے گئے۔ وزیراعظم نے کہا تھا کہ مہنگائی کی نگرانی خود کروں گا اور اب وہ مہنگائی 11 فیصد سے اوپر چلی گئی ہے۔ وزیراعظم کو چاہئے کہ مہربانی کرکے خود کسی چیز کی نگرانی نہ کیا کریں۔

سیالکوٹ واقعے سے متعلق لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ سیالکوٹ میں ایک خاتون افسر کیساتھ جو کیا گیا ہے اس پر معاون خصوصی معافی ہی مانگ لیں۔ یہ لوگ آپ کےذاتی ملازم نہیں ہیں۔

شاہد خاقان نے سوال کیا کہ ملک میں آٹا ہم خود پیدا کرتے ہیں لیکن اس کی قیمت دگنی کیسے ہوگئی۔ وزیراعظم اس معاملے پر ہی کوئی کمیشن بنا دیں۔ انھوں نے یہ بھی سوال کیا کہ چینی کی قیمت کم کرنے کیلئے حکومت نے کیا اقدامات کئے۔ ہمیں بتایا گیا کہ جہانگیر ترین پرکیس بنا دیا گیا لیکن اب تفتیشی افسر کوتبدیل کردیا گیا۔ ایف آئی اے نےعدالت میں کہہ دیا کہ ہم سے ان کا نام ڈال کرغلطی ہوگئی۔

الیکشن سے متعلق شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پچھلی بار آر ٹی ایس پر کام ڈالا گیا اور الیکشن وہیں سے چوری ہوا۔ اس ملک کو صرف ایک انتخابی اصلاحات کی ضرورت ہےاوراس کا نام آئین ہےاور آئین کے تحت ہی ملک کو چلائیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube