Saturday, June 12, 2021  | 1 ZUL-QAADAH, 1442

خیبرپختونخوا:آکسیجن کا استعمال 83 فیصد تک پہنچ گیا

SAMAA | - Posted: Apr 28, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 28, 2021 | Last Updated: 2 months ago

خیبرپختونخوا میں کرونا کی تیسری لہر شدت اختیار کرتی جارہی ہے اور اس وباء کے مریضوں میں اضافے کے باعث اسپتالوں میں آکسیجن کا یومیہ استعمال 40 ہزار لیٹر سے بڑھ کر ساڑھے 72 ہزار لیٹر تک پہنچ چکا ہے۔

ماہرین کے مطابق اگر صورتحال یہی رہی تو صوبے میں آکسیجن کی قلت پیش آسکتی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ صوبے کے اسپتالوں میں 2 ہزار سے زائد کرونا کے مریض زیر علاج ہیں جس کے باعث طبی عملے پر بوجھ مزید بڑھ رہا ہے۔

سماء سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر سعود کا کہنا تھا کہ جس طریقے سے ہم لوگ کرونا سے متاثر ہوئے چلے جا رہے ہیں اس سے خدشہ پیدا ہوگیا ہے کہ خواہ اسپتالوں میں بیڈز اور گھر پر اچھی دوائی مل بھی جائے لیکن مریضوں کو سانس لینے کیلئے آکسیجن دستیاب نہیں ہوگی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ دنیا میں آئی سی یو مریض کیلئے ایک ڈاکٹر اور ایک نرس ہوتی ہے جو ہمارے پاس نہیں اور کہیں ایسا نہ ہو کہ حالات اس نہج پر پہنچ جائیں کہ مریضوں کے علاج کیلئے ڈاکٹرز، نرس اور پیرامیڈیکس دستیاب ہی نہ ہوں۔

WhatsApp FaceBook
KP

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube