Saturday, December 4, 2021  | 28 Rabiulakhir, 1443

جعلی اکاؤنٹس کیس: سابق صدر کیخلاف ایک اور ریفرنس دائر

SAMAA | - Posted: Apr 27, 2021 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 27, 2021 | Last Updated: 7 months ago

آصف زرداری اور مشتاق احمد ملزم نامزد

قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کے خلاف اسلام آباد کی احتساب عدالت میں 8 ارب روپے کی بدعنوانی کا ریفرنس دائر کردیا۔

نیب کے دائر ریفرنس میں آصف زرداری اور مشتاق احمد کو ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

نیب کے مطابق مشتاق احمد اور ملک کی ایک نامور نجی سوسائٹی کے درمیان 8 ارب روپے سے زائد کی غیرقانونی ٹرانزیکشن ہوئیں اور اس رقم سے کراچی کے پوش علاقے میں جائیدادیں خریدی گئیں۔

ریفرنس میں بتایا گیا کہ مذکورہ جائیدادیں آصف زرداری کی ملکیت ہیں جبکہ یہ رقم سمٹ بینک کے ذریعے منتقل کی گئی تھی۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں دائر ریفرنس میں نیب کا مزید کہنا تھا کہ مشتاق احمد کے اکاؤنٹ سے 15 کروڑ روپے کی ادائیگی پر کراچی کے علاقے کلفٹن میں ایک گھر خریدا گیا جو آصف علی زرداری کی ملکیت ہے۔

نیب کا کہنا ہے کہ آصف علی زرداری کو سوالنامہ بھیجا گیا تھا جس میں وہ مذکورہ گھر اور دیگر سے متعلق سوالات کا جواب نہیں دے سکے۔

نیب نے مزید بتایا کہ مشتاق احمد 2009 سے 2013 تک ایوان صدر میں سرکاری ملازم رہے ہیں، جنہیں سینیٹر رخسانہ بنگش کے کہنے پر اسٹینوٹائپسٹ کے طور پر بھرتی کیا گیا تھا۔

ریفرنس میں کہا گیا کہ ملزم مشتاق احمد نے آصف علی زرداری کے ساتھ 104 غیرملکی دورے کیے ہیں جبکہ ملزم فی الحال فرار ہے۔

نیب ریفرنس میں بتایا گیا کہ مشتاق احمد، ماڈل ایان علی کی گرفتاری کے وقت ائیرپورٹ پر بھی موجود تھا۔

واضح رہے نیب کی جانب سے یہ آصف علی زرداری کے خلاف پہلا ریفرنس نہیں ہے اسے قبل بھی سابق صدر کو متعدد بد عنوانی کے ریفرنسز کا سامنا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
Asif Zardari, Ayan Ali, PPP, Bilawal Bhutto
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube