Monday, September 27, 2021  | 19 Safar, 1443

افغانستان سے انخلا کے بعد پاکستان میں دہشتگردی کا خطرہ ہوگا،امریکی جنرل

SAMAA | - Posted: Apr 27, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 27, 2021 | Last Updated: 5 months ago

بشکریہ اے ایف پی

سینٹ کام کمانڈر جنرل کیتھ نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ افغانستان سے غیر ملکی فوجی انخلا کے بعد پاکستان میں دہشت گردی کے خطرات بڑھ سکتے ہیں۔

پینٹاگون میں پیر کو ہفتہ وار پریس کانفرنس سے خطاب میں امریکی فوج کے سینٹرل کمانڈ سربراہ جنرل کیتھ ایف میکنزی نے کہا کہ غیر ملکی فوج انخلا کے بعد افغانستان میں القاعدہ اور داعش کے دوبارہ فعال ہونے کا امکان ہے۔ یہ خطرہ پڑوسی ملک پاکستان میں دہشت گردی بڑھنے کا سبب بننے گا۔

انہوں نے کہا کہ داعش اور القاعدہ خطے کے ملکوں خاص طور پر پاکستان کے لیے شدید تشویش کی بات ہے۔ افغانستان میں استحکام خطے کے تمام ملکوں کے مفاد میں ہے۔ تاہم اگر دباؤ برقرار نہ رکھا گیا تو القاعدہ اور دولت اسلامیہ افغانستان وہاں دوبارہ منظم ہو سکتی ہیں۔

جنرل کیتھ نے یہ بھی کہا کہ طالبان نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ان تنظیموں کو افغانستان کی سرزمین استعمال نہیں کرنے دیں گے۔ امید کرتے ہیں کہ اگر طالبان مستقبل میں افغان حکومت کا حصہ بن جاتے ہیں تو وہ اپنے وعدے کی پاسداری کریں گے۔

اس موقع پر ان سے افغان امن مذاکرات پر بھی سوال کیا گیا۔ سینٹ کام کمانڈر نے کہا کہ ابھی ہم یہ نہیں جانتے کے افغان حکومت کی شکل کیا ہوگی کیونکہ طالبان نے افغانستان کے امن مذاکرات میں شرکت کرنے سے انکار کر دیا اور یہ مذاکرات عارضی طور پر تعطل کا شکار ہو گئے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube