Monday, September 27, 2021  | 19 Safar, 1443

کرونا کیسز میں اضافہ، پمز میں سہولیات کم پڑگئیں

SAMAA | - Posted: Apr 23, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 23, 2021 | Last Updated: 5 months ago

اسلام آباد کے پمز اسپتال کا ایک منظر۔ فوٹو : آن لائن

کورونا کی تیسری لہر کے دوران مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافے کے باعث اسلام آباد کے اسپتال پمز میں سہولیات کم پڑگئیں، انتظامیہ نے مدد کیلئے وزارت صحت سے رجوع کرلیا۔

این سی او سی کی ویب سائٹ پر جاری اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں کرونا وائرس سے یکم اپریل سے 22 اپریل تک ایک لاکھ 5 ہزار 943 نئے کیسز رپورٹ جبکہ 2 ہزار 411 مریض انتقال کر چکے ہیں، فعال کیسز کی تعداد 84 ہزار 976 ہے اور 4 ہزار 652 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب میں کرونا ویکسینیشن سینٹرز کے اوقات تبدیل

کرونا وائرس کی تیسری لہر کے دوران کیسز میں تیزی سے اضافے کے باعث اسلام آباد کے سب سے بڑے اسپتال پمز میں سہولیات کم پڑ گئیں، انتظامیہ نے وزارت صحت سے سہولیات بڑھانے کیلئے رجوع کرلیا۔

پمز انتظامیہ کے مطابق پہلے سے شیڈول تمام سرجریز ملتوی کردی گئی ہیں جبکہ آئی سی یو میڈیکل وارڈ 2 کے کرونا مریضوں کو دیگر آئی سی یوز میں منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس فیصلے سے آئی سی یوز میں آکسیجن کی فراہمی بلاتعطل جاری رہ سکے گی۔

مزید جانیے : کرونا وائرس سے متعلق پابندیاں سخت، ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے فوج سے مدد لینے کا فیصلہ

وزارت صحت کو لکھے گئے خط میں پمز انتظامیہ کا کہنا ہے کہ کرونا مریضوں کی تعداد ایمرجنسی روم میں موجود ہے، ایمرجنسی روم میں آکسیجن پوائنٹس کرونا مریضوں کے زیراستعمال ہیں۔

وفاقی حکومت نے ملک بھر میں کرونا وائرس سے متعلق ایس او پیز سخت کردیئے ہیں، جبکہ وزیراعظم عمران خان نے ہدایات پر عملدرآمد کیلئے فوج کو بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube