شاہد خاقان عباسی کا این سی او سی بند کرنے کا مطالبہ

SAMAA | - Posted: Apr 22, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 22, 2021 | Last Updated: 2 months ago

کابینہ کو اپنے اختیارات کا علم نہیں

شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پوری دنیا نے کرونا پر قابو پا لیا لیکن پاکستان میں وائرس بڑھتا جا رہا ہے۔این سی او سی کو بند کردیں کیوں کہ یہ عوام کو تحفظ دینے میں ناکام ہوچکا ہے۔

جمعرات کو اسلام آباد کی احتساب عدالت میں ایل این جی ریفرنس کی سماعت ہوئی۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی عدالت میں پیش ہوئے۔ جج اعظم خان نے استفسار کیا کہ آپ کے وکیل بیرسٹر ظفر اللہ اب کیسے ہیں؟۔ شاہد خاقان نے جواب دیا کہ بیرسٹر ظفر اللہ ابھی کرونا پازیٹو ہیں، آئندہ سماعت پراگر نیگیٹو ہوئےتوعدالت آجائیں گے۔ وکلاءکی عدم موجودگی پر عدالت نے سماعت میں وقفہ کر دیا اور شاہد خاقان عباسی کو حاضری لگا کر جانے کی اجازت مل گئی۔

 اس موقع پر میڈیا سے بات کرتےہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ اسلام آباد میں 2 دن پہلے پیمرا کے سابق چئیرمین اور سینیر صحافی ابصار عالم کو پارک میں گولی ماری گئی۔آج تک کسی کو پتہ نہیں ہے کہ وہ لوگ کون تھے۔ یہ واضح معلوم ہوتا ہے کہ اب صحافیوں کو جان کا خطرہ بھی ہے۔ انھوں نے مزید بتایا کہ جس طرح یہ واقعہ ہوا اس پر ضروری ہے کہ پارلیمان اس معاملےکواٹھائے اور کل قومی اسمبلی میں یہ معاملہ اٹھایا جائے گا۔

شاہدخاقان نےخدشہ ظاہر کیا کہ قومی اسمبلی کا جو اسپیکر ایوان میں ناموس رسالت ﷺکی بات نہ کرنے دے توامید نہیں کہ وہ صحافت کی بات کرنے دے۔

کرونا وائرس سے متعلق انھوں نے کہا کہ پاکستان میں خیرات کی ویکسین لگائی جا رہی ہے اور حکومت ایک ٹیکا نہیں خرید سکی۔ یہ وہ واحد ملک ہے جہاں عوام اپنے پیسے سے ویکسین لگوانے پر مجبور ہیں۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ کابینہ اجلاس میں سیاسی جماعتوں کو کالعدم قرار دیا جاتا ہے اور پھر اس ہی کالعدم جماعت سے مذاکرات بھی کئے جاتے ہیں، سیاسی جماعتوں کو کالعدم کرنا کابینہ کا اختیار نہیں اور انھیں اپنے اختیارات کا علم نہیں۔

ملکی معاملات پر انھوں نے کہا کہ اس وقت ملک کی معیشت،اخلاقی قدریں سب زوال پذیرہیں۔ یہاں وزرا کی فوج ہے اور روز نوکریاں بدلی جارہی ہیں۔عوام شناختی کارڈ ہاتھ میں لے کر ایک ایک کلو چینی خریدنے پر مجبور ہیں۔

نیب سے متعلق انھوں نے کہا کہ نیب صرف اپوزیشن کے لئے بنا ہے۔ چینی اسکینڈل کے قصور وار وزیراعظم اور کابینہ ہے، پنجاب کےوزراء کاشوگراسکینڈل سے تعلق ہی نہیں ہے ۔ان پر بھی نیب کا کیس بنائیں اور انہیں بھی جیل کے اندر ڈالیں۔ شہباز شریف ڈیڑھ سال جیل کاٹ چکے ہیں لیکن ان پر ایک الزام بھی نہیں لگا۔

اسپیکرکو جوتامارنے کی دھمکی، شاہدخاقان عباسی کونوٹس جاری

اسپیکر کو جوتا مارنے کی دھمکی اور نوٹس ملنے پر انھوں نے کہا کہ صرف اللہ سے ڈرتا ہوں اور کسی بھی انسان سے معافی نہیں مانگ سکتا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube