عمران فاروق کیس:سزاکیخلاف مجرمان کی اپیلیں،محسن علی کےوکیل کےدلائل مکمل

SAMAA | - Posted: Apr 20, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 20, 2021 | Last Updated: 2 months ago

ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس کے مجرمان کی سزا کے خلاف اپیل پر مجرم محسن علی کے وکیل نے دلائل مکمل کرلیے۔ معظم علی اور خالد شمیم کے وکلاء سے پیر کے روز دلائل طلب کرلئے گئے۔

منگل کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس میں مجرمان کی سزا کیخلاف اپیلوں پر سماعت ہوئی۔اپیلوں پرسماعت چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسسٹس بابر ستار نے کی۔ ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ تمام مجرمان کے وکلاء دلائل دے دیں جس کے بعد جواب دوں گا۔

مجرم محسن علی کے وکیل نے دلائل دئیے کہ محسن پر چاقو خریدنے کا الزام لگایا گیا لیکن کسی سیلزمین کو بطور گواہ نہیں لایا گیا جبکہ عمران فاروق سے منسوب ایک خط کا ترجمہ دکھایا۔ ترجمے کیمطابق عمران فاروق نے خط میں کہا تھا کہ بانی ایم کیوایم سے خطرہ ہے،مسئلہ یہ ہے کہ اس خط کا صرف ترجمہ موجود ہے اوراصل خط دکھایا ہی نہیں گیا۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ عمران فاروق نے یہ خط کس کے نام لکھا تھا؟۔ایف آئی اے پراسیکوٹرخواجہ امتیاز نے بتایا کہ یہ خط نہیں تھا بلکہ عمران فاروق کی ڈائری کا ایک صفحہ تھا۔

وکیل نے عدالت کو بتایا کہ جس چاقو کو آلہ قتل کہا گیا وہ لندن میں کئی اسٹورز پر دستیاب ہے۔چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ اگر یہ چاقو کئی اسٹورز پردستیاب ہے تو اس کا کیا مطلب ہوا۔وکیل نے کہا کہ ہم یہ کہتے ہیں کہ وہ آلہ قتل محسن علی نے خریدا ہی نہیں تھا۔عدالت نے کیس کی سماعت پیر کے روز تک ملتوی کردی۔

مجرمان کی جانب سے اے ٹی سی کا 18  جون 2020 کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔ مجرمان کی جانب سے پچھلے برس سزا کے خلاف اپیلیں دائر کی گئی تھیں۔

عمران فاروق قتل کیس،ملزمان کوعمرقیدکی سزاسنادی گئی

واضح رہے کہ خصوصی عدالت نےقتل کیس میں خالد شمیم،معظم اور محسن کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔فیصلے میں عدالت نے ریمارکس دئیےکہ استغاثہ نےاپنا کیس ثابت کردیا ہے،ملزمان نے مادر وطن کا نام پوری دنیا میں بدنام کیا مثالی سزا کے مستحق ہیں،سزائے موت کے لئے یہ بہترین کیس ہے لیکن ترمیمی آرڈیننس کے بعد بیرون ملک سے حاصل شواہد پر سزائے موت دے نہیں سکتے۔ قتل کی سازش اورمعاونت پر بانی متحدہ سمیت 4افراد کے وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے جاچکے ہیں۔

چودہ جون 1960 کو کراچی میں پیدا ہونے والےایم کیوایم رہنماء عمران فاروق کا 16ستمبر 2010 میں لندن کےعلاقے ایجوائر میں قتل ہوا تھا۔ ان کا شمار ایم کیوایم کے سرکردہ رہنماء اور آل پاکستان مہاجراسٹوڈنٹ آرگنائزیشن کے بانیوں میں سے ہوتا تھا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube