تحریک لبیک سے مذاکرات کا دوسرا دور آج شام کوہوگا

SAMAA | - Posted: Apr 19, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Apr 19, 2021 | Last Updated: 2 months ago

Naeem Ashraf Butt Art Final

تحریک لبیک پاکستان سے آج شام ہونے والے مذاکرات کے دوسرے دور کے دوران حکومتی کمیٹی کالعدم مذہبی تنظیم سے لانگ مارچ منسوخ کرنے کا مطالبہ کرے گی۔

کالعدم تنظیم ٹی ایل پی نے فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے کےلیے 20اپریل کو لانگ مارچ کرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔

دوسرے دور ميں لانگ مارچ اور کارکنوں کی رہائی پر بات ہوگی۔ دہشت گردی کے مقدمات والوں پر بات نہيں ہوگی صرف ايم پي او کے تحت حراست ميں ليے گئے کارکنوں پر مذاکرات ہوں گے۔

پہلے دور ميں 11 پولیس اہلکاروں کو چھوڑا گیا اور سيز فائر پر اتفاق ہوا۔

گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور اور وزير قانون پنجاب راجہ بشارت ٹی ایل پی کے 5رکنی وفد سے مذاکرات کریں گے۔ مذاکرات نيوٹرل جگہ پر ہوں گے۔

ایک ویڈیو پیغام میں وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا تھا کہ پولیس بھی اب پیچھے ہٹ گئی ہے جبکہ ٹی ایل پی کے کارکنان بھی جامعہ مسجد رحمۃ للعالمین میں واپس چلے گئے ہیں۔

کالعدم ٹی ایل پی سےیکجتی،علماکےاعلان پرآج ملک بھرمیں شٹرڈاؤن ہڑتال

ملک گیر ہڑتال

واضح رہے کہ لاہور واقعے کے خلاف مفتی منیب الرحمان کے اعلان پر آج ملک بھر میں پہیہ جام اور شٹر ڈاؤن ہڑتال جاری ہے۔ کراچی میں شٹر ڈاؤن اور پیہہ جام ہڑتال کی کال پر کاروباری مراکز بند اور سڑکوں سے ٹرانسپورٹ غائب ہے۔

دوسری جانب مولانا فضل الرحمان نے بھی معاملے پر یکجتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم بھی اس معاملے میں مفتی منیب کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے اس واقعے کی مذمت کرتے ہیں۔

کسی بھی ممکنہ رد عمل سے نمٹنے کیلئے اسلام آباد، راول پنڈی، لاہور اور کراچی سميت مختلف شہروں ميں  سيکيورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔ کراچی کے مختلف علاقوں میں اتوار کی رات سے ہی مظاہرین جمع ہونا شروع ہوگئے، جس کے بعد اہم مقامات پر رینجرز نے پوزیشنز سنبھال لیں۔

سعد رضوی کی گرفتاری

گزشتہ ہفتے کے آغاز میں کالعدم تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ سعد حسین رضوی کی گرفتاری کے بعد ملک کے تمام بڑے شہروں میں ٹی ایل پی کے کارکنان کی جانب سے مظاہرے شروع ہوئے تھے۔ جو تین دن تک جاری رہے جس میں پولیس اہلکاروں سمیت متعدد افراد زخمی ہوئے۔

دوسری جانب پولیس افسران پر حملہ کرنے اور سڑکوں کو روکنے کے الزام میں ہزاروں ٹی ایل پی کے کارکنان کو گرفتار کیا گیا اور ان کے خلاف مقدمات درج کیے گیے جب کہ جمعرات 15اپریل کو پارٹی پر پابندی عائد کرتے ہوئے اسے کالعدم قرار دیدیا گیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube