پولیس، ٹی ایل پی کارکنان میں جھڑپیں، 2افراد جاں بحق

SAMAA | - Posted: Apr 18, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Apr 18, 2021 | Last Updated: 2 months ago

پولیس اہلکاروں سمیت 50افراد زخمی

لاہور میں کالعدم تحریک لبیک پاکستان کے کارکنا اور پولیس کے درمیان متعدد جھڑپوں کے دوران 2کارکنان سمیت 50سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

مظاہرین پارٹی کےصدر دفتر کے باہر جمع ہوگئےتھے اور ٹی ایل پی کے سربراہ سعد حسین رضوی کی گرفتاری کےخلاف نعرے بازی کررہے تھے۔ احتجاج کو ختم کرنے کے لئے صبح 8 بجے پولیس کی ایک ٹیم کو علاقے کو گھیرے میں لیا تھا۔

آپریشن کے دوران ملتان روڈ کےقریب پولیس اورمظاہرین کےمابین تصادم ہوا، جس کےباعث 11پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔

سی سی پی او لاہور کے ترجمان رانا عارف نے میڈیا کو بتایا کہ ٹی ایل پی کے کارکنوں نے ایک ڈی ایس پی عمر فاروق بلوچ کو 'بے دردی سے تشدد کیا' اور پانچ کانسٹیبلز اور 2رینجرز اہلکاروں سمیت  کئی عہدیداروں کو یرغمال بنالیا۔

جس کے بعد پولیس اور دیگر سیکیورٹی ٹیموں کی بھاری نفری احتجاجی مقامات پر تعینات کردی گئی ہے۔

یاد رہےکہ گزشتہ ہفتے کے آغاز میں سعد حسین رضوی کی گرفتاری کے بعد ملک کے تمام بڑے شہروں میں ٹی ایل پی کے کارکنان کی جانب سے مظاہرے شروع ہوگئے تھے۔ جو تین دن تک جاری رہے جس میں سیکڑوں پولیس اہلکاروں سمیت متعدد افراد زخمی ہوئے۔

دوسری جانب پولیس افسران پر حملہ کرنے اور سڑکوں کو روکنے کے الزام میں ہزاروں ٹی ایل پی کے کارکنان کو گرفتار کیا گیا اور ان کے خلاف مقدمات درج کیےگیے جبکہ جمعرات 15اپریل کو پارٹی پر پابندی عائد کرتے ہوئے کالعدم قرار دیدیا گیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube