Saturday, September 25, 2021  | 17 Safar, 1443

ڈیجی ٹانکس کیس: ایف آئی اےکا جےآئی ٹی بنانےکا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Apr 15, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 15, 2021 | Last Updated: 5 months ago
FIA RAID

فائل فوٹو

وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے ڈیجی ٹانکس کیس میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) بنانے کا فیصلہ کرلیا۔

سٹی کورٹ کراچی میں آئی ٹی کمپنی ڈیجی ٹانکس پر منی لانڈرنگ اور جعلسازی کے الزام سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ ایف آئی اے کے تفتیشی افسر نے عدالت کو ڈیجی ٹانکس کیس میں جے آئی ٹی بنانے کے فیصلے سے آگاہ کیا۔

ایف آئی اے تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ کیس انتہائی حساس ہے اس لیے معاملے کی تحقیقات ضروری ہے جس کے لیے جے آئی ٹی بنانے کی سفارش کی گئی ہے۔

عدالت نے جے آئی ٹی بنانے سے متعلق خط طلب کرتے ہوئے ریمارکس دیے کہ جے آئی ٹی تشکیل دینے کے بعد لیٹر کاپی عدالت میں بھی پیش کی جائے۔

نئے تفتیشی افسر نے کیس میں پیش رفت رپورٹ پیش کرنے کے لیے مہلت مانگی، جس پر عدالت نے تفتیشی افسر سے 15 روز میں پیش رفت رپورٹ طلب کرلی۔

سافٹ ویئر ہاؤس کے دفتر پر چھاپہ

ایف آئی اے نے 12 جنوری کو شارع فیصل پی ای سی ایچ ایس کے علاقے میں قائم بزنس ایوینیو کی عمارت کے اندر موجود سافٹ ویئر ہاؤس ڈیجی ٹانکس کے دفتر پر خفیہ اطلاعات پر چھاپہ مارا تھا۔ اس دوران کمپیوٹرز سمیت دیگر سامان قبضے میں لیا گیا۔

چھاپے کے دوران سافٹ ویئر ہاؤس میں کام کرنے والے 8 افراد کے بیانات بھی لیے گئے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے عبدالغفار نے چھاپے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ فی الحال کارروائی سے متعلق میڈیا کو کچھ نہیں بتا سکتے۔ سرکاری بیان بعد میں جاری کیا جائے گا۔ کمپنی کے بین الاقوامی مشکوک رابطوں کے حوالے سے کارروائی کی گئی جبکہ ایک ملازم کو بھی حراست میں لیا گیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube