ملک بھر میں مڈل اسکول 28اپریل تک بند رکھنے کافیصلہ

SAMAA | - Posted: Apr 6, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Apr 6, 2021 | Last Updated: 1 month ago

اولیول کے امتحانات شیڈول کے مطابق ہونگے

نیشنل کمانڈاینڈ آپریشن سینٹر ( این سی او سی) کے اہم اجلاس میں کرونا سے متاثرہ اضلاع میں اسکولوں کو 28 اپریل تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پہلی سے 8 ویں تک کلاسز نہیں ہوں گی، تاہم صوبے اپنے اپنے فیصلوں کو لیے خودمختار ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر ( این سی او سی) کے آج ہونے والے اجلاس میں امتحانات کی صورت حال سے متعلق بھی مشاورت کی گئی۔ این سی او سی نے ملک بھر میں کرونا سے متاثرہ اضلاع میں کلاس ایک سے 8ویں تک اسکولوں کو 28 اپریل تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے، تاہم مزید فیصلہ 28 اپریل کو ہونے والے اجلاس میں کیا جائے گا۔

شفقت محمود نے کہا کہ جو ضلع متاثر ہیں وہاں اسکولوں میں پہلی سے 8 ویں تک کلاسز نہیں ہونگی۔  یہ صوبوں کو فیصلہ کرنا ہے کہ کہاں اسکول بند کرنے ہیں یا نہیں۔ وزیر تعلیم شفقت محمود نے بتایا کہ ملک کا ہر ضلع کرونا سے متاثر نہیں ہے اس لیے جو اضلاع متاثر ہیں وہاں کلاس ایک سے آٹھویں تک اسکولوں کو 28 اپریل تک بند رکھا جائے گا ۔

انہوں نے مزید کہا کہ 28 اپریل کو دوبارہ اس معاملے کا جائزہ لیں گے کہ اسکولوں کو عید تک بند رکھا جائے یا عید سے پہلے اسکولز کھولے جائیں۔ کرونا سے متاثرہ اضلاع میں یونیورسٹیز بھی بند رہیں گے۔

وزیر تعلیم نے مزید کہا کہ ملک بھر میں 19 اپریل سے نویں اور 10، 11 اور 12 جماعتوں کے طالب علم تعلیمی اداروں میں سخت ایس اوپیز کے تحت آسکتے ہیں، تاکہ وہ امتحانات کی تیاری کرسکیں، تاہم زیادہ کیسز سے متاثرہ علاقوں میں تعلیمی ادارے بند رکھے جائیں گے۔

امتحانات کا اعلان

امتحانات سے متعلق وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے پریس کانفرنس میں اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ امتحانات ضروری ہونگے، طالب علم امتحانات کی تیاری کریں۔ 40 لاکھ بچوں کے نویں اور دسویں کے امتحانات مئی کے تیسرے ہفتے میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ امتحانات 24 مئی سے پہلے نہیں ہوں گے۔

اولیول امتحانات

وزیر تعلیم نے بتایا کہ اولیول اور اے لیول کے امتحانات شیڈول کے مطابق اور مکمل ایس او پیز کے تحت لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

آج ہونے والے اجلاس میں وزرائے تعلیم اور صحت ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔ این سی او سی اجلاس میں امتحانات کی صورت حال کا بھی جائزہ لیا گیا۔

یونی ورسٹی میں داخلہ

وزیر تعلیم نے یہ بھی کہا کہ یونیورسٹی میں بھی داخلوں کو آگے کرنے کا کہا ہے کیونکہ امتحانات تاخیر سے ہوں گے، تو نتیجہ بھی تاخیر سے آئے گا، بورڈ اور ہائرایجوکیشن کمیشن اس معاملے پر بات کرکے فیصلہ کریں گے۔ یونی ورسٹیوں سے بھی درخواست کی گئی ہے کہ جامعات میں طالب علموں کے ایڈمیشن کیلئے تاریخیں بھی امتحانات کو مد نظر رکھ کر دی جائیں۔

پنجاب کے وزیر تعلیم کا اعلان

دوسری جانب وزیر تعلیم پنجاب نے اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب کے 11 اضلاع میں تعلیمی ادارے عید تک بند رہیں گے۔ 11اضلاع می‍ں پہلی سے آٹھویں جماعت تک اسکولز بند رہیں گے۔ لاہور، راول پنڈی، گجرات، گجرانوالہ، ملتان بھی شامل ہیں۔ صوبائی وزیر تعلیم نے کہا کہ بہاولپور، سیالکوٹ، فیصل آباد، سرگودھا میں بھی چھٹیاں رہیں گی۔ ٹوبہ ٹیک سنگھ، رحیم یارخان اور ڈیرہ غازی خان میں بھی عید تک اسکولز بند رہیں گے۔ چھٹیاں دینے کے فیصلے کا 2 ہفتے بعد دوبارہ جائزہ لیا جائے گا۔

قبل ازیں وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں تعلیمی اداروں کو کھلے رکھنے یا بند رکھنے کا مشترکا فیصلہ آج بروز منگل 6 اپریل کو این سی او سی کے اجلاس میں کیا جائے گا۔ مائیکرو بلاگنگ سائٹ پر وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا تھا کہ بروز منگل 6 اپریل کو این سی او سی میں وزرائے تعلیم اور صحت کا اجلاس ہوگا۔

واضح رہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے کراچی سمیت صوبے بھر میں پہلے ہی  پہلی سے 8 ویں جماعت تک اسکولوں کو 15 روز کیلئے بند کرنے کا حکم دے دیا گیا تھا۔ فیصلہ سرکاری اور نجی اسکولوں دونوں پر لاگو ہے۔

اس دوران فزیکل کلاسز معطل رہیں گی، تاہم بچوں کی تعلیم کو آن لائن، ہوم ورک اور دیگر ذرائع سے جاری رکھا جاسکتا ہے۔

پرائیوٹ اسکولز ایسوسی ایشنز کے چئیرمین حیدر علی نے سماء سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ تعلیمی اداروں کی بندش مسترد کرتے ہیں۔ مکمل لاک ڈاؤن سے پہلے اسکولز بند نہیں کیے جائیںگے۔ آن لائن کلاسز سے دنیا بھر میں مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہوئے، اس لئےاسمارٹ لاک ڈاؤن کی پالیسی اختیار کی جائے۔ حیدر علی نے بتایا کہ اسکول بند ہونے سے 10 لاکھ بچے اسکول واپس نہیں آسکے ہیں۔

اس سے قبل بروز ہفتہ 3 اپریل کو صوبائی وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کی جانب سے ہونے والے محکمہ تعلیم کی اسٹیئرنگ کمیٹی میں رمضان المبارک سے متعلق نئے اوقات کار جاری کیے گئے۔

فیصلے کے مطابق صبح کی شفٹ والے اسکولوں 7:30 سے 11:30 ہونگے۔

دوسری شفٹ 11:45 سے 02:45 تک ہونگے۔

جمعہ والے روز صبح کی شفٹ والے اسکولوں کے اوقات 7:30 سے صبح 10:30 بجے اور دوپہر کی شفٹ 10:45 سے دوپہر 1 بج کر 15 منٹ  تک ہونگی۔

قبل ازیں بلوچستان میں تمام تعلیمی ادارے کھلے رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ محکمہ تعلیم اور محکمہ صحت بلوچستان نے صوبے میں تعلیمی ادارے بند نہ کرنے پر متفق فیصلہ دیا۔

صوبائی وزیر تعلیم سردار یار محمد رند اور پارلیمانی سیکریٹری صحت ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی کے درمیان ملاقات میں کرونا وائرس کی تازہ صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا، جس کے بعد صوبہ بھر میں تعلیمی ادارے کھلے رکھنے کا فیصلہ ہوا۔

WhatsApp FaceBook

4 Comments

  1. Anonymous  April 6, 2021 3:03 pm/ Reply

    School 1 to 8 class eid tak band ho na chaiyen online to ho rahi hai

  2. Mrs .Abdullah  April 6, 2021 6:24 pm/ Reply

    Ye koi theek decision ni covid kb khtm ho ga koi pta ni tu kb tk bchy out of school rahen gy. 50 percent bacon wala option use honna chahye.

  3. Abdullah  April 6, 2021 7:17 pm/ Reply

    Teachers tu online parha parha k pagal ho gay hain bache phir bhi nahi parhte

  4. Iram butt  April 8, 2021 1:34 pm/ Reply

    Online classes ek failiure experiment hai bht se bache internet se mahroom hai un k future ka kya bne ga plz respected sir kindly is per bhi nzre karam kre is ka hul nikalein bht se bache tution afford nhi kr sakty school s o pz k thet jld open hone chaye ya un bachon ki education ka solution nikale thanks

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube