Wednesday, December 1, 2021  | 25 Rabiulakhir, 1443

حکومت عوام کومہنگائی کےسونامی میں ڈبو چکی ہے، بلاول بھٹو

SAMAA | - Posted: Apr 2, 2021 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 2, 2021 | Last Updated: 8 months ago

نیب اورمعیشت ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے

پاکستان پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ حکومت نے عوام کو لاوارث چھوڑ کر مہنگائی کے سونامی میں ڈبودیا۔

جیکب آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ پاکستانی معيشت اور نيب ساتھ ساتھ نہيں چل سکتے، نيب کی بنياد سے آج تک کہہ رہے ہيں يہ کالا قانون ہے۔ کٹھ پتلی ہم پر زبردستی مسلط کيا گيا جسے کچھ نہيں پتہ، 3سال ميں 2 بار وزير خزانہ تبديل ہوئے ليکن پاليسی ايک رہی، حکومت نے عوام کو لاوارث چھوڑ کر مہنگائی کے سونامی میں ڈبودیا۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ پہلے دن سے پی ٹی آئی ايم ايف کی مخالفت کی، اسٹیٹ بینک کے آرڈیننس کو پارليمان ميں چيلنج کيا جائے گا۔ حکومت اپنے ادارے آئی ايم ايف کے حوالے کررہی ہے۔ خان صاحب جس تيزی سے وزير تبديل کرتے ہیں وہ گڈ گورننس نہيں، پارليمان کے اندر حکومت کو ٹف ٹائم ديتے تو کاميابی تھی۔

کرونا ویکسینیشن کے حوالے سے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ پاکستان تمام ممالک سے ویکسینیشن ميں پيچھے ہيں لیکن وفاقی حکومت ويکسين تمام لوگوں کے ليے خريدنے کو تيار نہيں۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے مزید کہا کہ جہاں دھاندلی ہوئی وہاں الیکشن کمیشن کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے،ہمارے نمائندوں کو دباؤ میں لانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ 2018 کے الیکشن میں پورے ملک میں دھاندلی ہوئی۔

اپوزیشن کے اتحاد کے سوال پر انہوں نے کہا کہ نہيں چاہتے حکومت کو اپوزيشن کی لڑائی سے کوئی فائدہ ہو، 3سال کوشش کی کہ جمہوريت کيلئے سب ساتھ مل کرچليں، ہمارے ليڈرز کہتے رہے ن ليگ کے ساتھ چلنا مشکل ہوگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube