ہائیکورٹ کی وزیراعظم کی بنائی گئی سوشل میڈیا رولزکمیٹی سے رپورٹ طلب

SAMAA | - Posted: Apr 2, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 2, 2021 | Last Updated: 2 months ago

فائل فوٹو

سوشل میڈیا رولز کے خلاف درخواستوں پر سماعت کے دوران اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیراعظم کی قائم کردہ کمیٹی سے 10 مئی تک رپورٹ طلب کرلی ہے۔ کمیٹی کو رُولز میں ترامیم پر مشاورت کے بعد رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

جمعہ کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں سماعت کے دوران اٹارنی جنرل نے بتایا کہ وزیراعظم نے سوشل میڈیا رولز پر اعتراضات کے جائزے کی کمیٹی بنائی ہے اور ان سے سوشل میڈیا رولز پر مشاورت سے متعلق بھی ذکرکردیا ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ سوشل میڈیا رولز جائزہ سے متعلق اٹارنی جنرل کے اقدامات قابل تعریف ہیں۔ امید ہے کہ وزیراعظم کی قائم کردہ کمیٹی اعتراضات کا جائزہ لے کر رپورٹ بنائے گی۔

عدالت کےاستفسار پراٹارنی جنرل نے بتایا کہ اٹارنی جنرل آفس کمیٹی کی معاونت کے لیے دستیاب ہوگا اورآئندہ ہفتے یہ کمیٹی کام شروع کردے گی اور کمیٹی کو ایک ماہ میں کام مکمل کرنا ہے۔

وکیل درخواست گزار کا کہنا تھا کہ حکومت نے پہلے ہی بہت دیر کردی اور اب اس میں مزید التوا کرنا چاہتی ہے،حکومت کی کمیٹی میں اپوزیشن کا کوئی ممبر بھی شامل نہیں۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ہم کچھ فرض نہیں کرسکتے،اعتماد رکھیں اور کمیٹی کی تجاویز آنے دیں۔

وکیل درخواست گزار کا کہنا تھا کہ ہمارا اعتراض ہے کہ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مناسب طریقے سے مشاورت نہیں کی گئی۔ چیف جسٹس نے کہا کمیٹی اگر چاہے گی تو وہ اسٹیک ہولڈرز کو بھی بلا سکتی ہے۔عدالت نے کمیٹی کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے سماعت 10 مئی تک ملتوی کردی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube