Monday, December 6, 2021  | 30 Rabiulakhir, 1443

خیبرپختونخوا: ہرطرح کی انڈور،آؤٹ دوڑ تقریبات پر پابندی

SAMAA | - Posted: Mar 30, 2021 | Last Updated: 8 months ago
Posted: Mar 30, 2021 | Last Updated: 8 months ago

فائل فوٹو

خیبر پختونخوا حکومت نے کرونا وائرس کے کیسز بڑھنے پر صوبے بھر میں ان ڈور اور آؤٹ ڈور ہر طرح کی تقریبات پر پابندی عائد کردی ہے، جب کہ پشاور کے بازاروں میں دفعہ 144 نافذ کردی گئی ہے۔

خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومت کی جانب سے پشاور سمیت صوبے بھر میں کرونا کیسز میں مسلسل اضافہ کے بعد سختی ایس او پیز اور لائحہ عمل نافذ کردیئے ہیں۔

جاری نوٹی فیکیشن کے مطابق صورت حال بھر ہونے تک صوبے میں ایمرجنسی نافذ رہے گی۔ صوبے بھر میں ہر قسم کے آوٹ ڈور اور ان ڈور پروگراموں کے انعقاد پر پابندی ہوگی۔ پابندی کا اطلاق سماجی، ثقافتی، سیاسی اور کھیلوں کی سرگرمیوں پر بھی ہوگا۔

سیفٹی ماسک کے بغیر پشاور کے بازاروں میں گھومنے پر دفعہ 144 کے تحت پابندی عائد کی گئی ہے۔ پابندی کا اطلاق فوری طور پر ہوگا، جو ایک ماہ تک جاری رہے گی۔ کرونا سے زیادہ متاثرہ علاقوں میں ترجیحی بنیادوں پر مؤثر لاک ڈاؤن نافذ کیا جائے گا۔ خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف متعلقہ قانون کے تحت کارروائی ہوگی۔

دوسری جانب محکمہ تعلیم خیبرپختونخوا نے مزید کیسز سامنے آنے پر 6 اضلاع میں اسکول بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جس اضلاع میں کرونا کیسز میں اضافہ ہوگا وہاں کی تعلیمی سرگرمیاں بند کر دی جائے گی۔

صوبے کے 6 اضلاع شانگلہ، باجوڑ، ایبٹ آباد، دیراپر، ہری اور قبائلی ضلع خیبر میں اسکول بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس سے قبل 10 اضلاع میں تعلیمی اداروں کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ فیصلے کی روشنی میں 16 اضلاع میں تعلیمی سرگرمیاں 11 اپریل تک بند رہے گی اور جن اضلاع میں کرونا کیسز میں اضافہ ہوگا وہاں کی تعلیمی سرگرمیاں بند کر دی جائے گی۔

این سی او سی کے مطابق پشاور میں کرونا مثبت کیسوں کی شرح 28 اور سوات میں 26 فیصد ہوگئی ہے۔ وزیر صحت خیبر پختونخوا تیمور سلیم جھگڑا کے مطابق نوشہرہ میں کرونا مثبت کیسوں کی شرح 19 فیصد، بونیر میں 16 فیصد، مردان اور مالاکنڈ میں 12 فیصد جب کہ باجوڑ، چارسدہ اور صوابی میں 11 فیصد ہے۔

دوسری جانب کرونا کیس رپورٹ ہونے پر پشاور کے مزید علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق حیات آباد، زریاب کالونی اور سعیدآباد سمیت 9 علاقوں میں لاک ڈاؤن لگادیا گیا ہے۔ اسمارٹ لاک ڈاؤن والے علاقوں میں ضروری اشیاء کی دکانیں کھلی رہیں گی اور ان علاقوں میں غیرضروری آمدورفت پر پابندی ہوگی۔

علاوہ ازیں پشاور میں ضلعی انتظامیہ نے کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر گیارہ شادی ہالز کے مینجرز اور دکانیں کھلی رکھنے پر 22 دکانداروں کو گرفتار کرلیا جب کہ 12 دکانوں کو سِیل بھی کردیا گیا ۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube