Wednesday, October 20, 2021  | 13 Rabiulawal, 1443

پیپلزپارٹی نے متحدہ اپوزیشن سے راہیں جداکرکے نیااتحادبنالیا، احسن اقبال

SAMAA | - Posted: Mar 27, 2021 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 27, 2021 | Last Updated: 7 months ago

ن لیگی رہنماء احسن اقبال کہتے ہیں کہ پيپلزپارٹی نے پی ڈی ایم سے راہيں جدا کرليں، ايک نيا اتحاد بناليا، پی پی پی نے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کو بڑا دھچکا پہنچايا ہے۔

ملتان میں پریس کانفرنس کے دوران احسن اقبال نے دعویٰ کیا کہ پیپلز پارٹی نے بی اے پی، جماعت اسلامی اور اے این پی کے ساتھ مل کر نیا اتحاد بنادیا ہے، انہوں نے جو کیا اس پر ہمیں دکھ ہے، یوسف رضا گیلانی ن لیگ کے ووٹوں سے سینیٹر بنے لیکن پی پی نے حکومت سے ادھار سینیٹر لے کر اپوزیشن لیڈر بنایا۔

ن لیگی رہنماء کا کہنا ہے کہ عمران خان سے یہ نظام نہیں چل رہا، بدلہ اداروں پر حملے کرکے لیا جارہا ہے، اس شخص نے براڈ شیٹ کی فائلیں بھی غائب کرادیں، آج پورا پاکستان اس حکومت کی سزا کاٹ رہا ہے، 90 دن میں جنوبی پنجاب صوبہ بننا تھا، آج اس کا نام و نشان تک نہیں جبکہ ہم نے جنوبی پنجاب، بہاولپور صوبے سے متعلق ترمیمی بل 2 سال سے جمع کرا رکھا ہے۔

احسن اقبال نے مزید کہا کہ پاکستانی معیشت کو چلانے کیلئے 500 ملین ڈالر آئی ایم ایف سے لئے جارہے ہیں، عالمی مالیاتی ادارے کی قسط کی خاطر پاکستانی مالیاتی ادارے کو گروی رکھوایا جارہا ہے، آرڈیننس سے اسٹیٹ بینک پارلیمان کو جوابدہ نہیں رہے گا، پاکستان کی سالمیت پر بہت کاری ضرب لگائی جارہی ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ ایوان صدر کو آرڈیننس فیکٹری بنادیا گیا، 900 ارب کا مالیاتی بل آرڈیننس کے ذریعے نافذ کیا گیا، منی بجٹ کو پارلیمان سے پاس کرانا لازمی ہے، پارلیمنٹ کو بلڈوز کرکے 900 ارب کے ٹیکس لگائے جارہے ہیں۔

ایچ ای سی کے سربراہ کو عہدے سے ہٹانے کے معاملے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ن لیگی رہنماء کا کہنا تھا کہ آج ہائر ایجوکیشن کمیشن پر حملہ کیا گیا، مسلم لیگ ن منی بجٹ اور ہائر ایجوکیشن آرڈیننس کو عدالت میں چیلنج کرے گی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube