Saturday, October 16, 2021  | 9 Rabiulawal, 1443

ڈینیل پرل قتل کیس: عمرشیخ کولاہور منتقل کرنے کی اجازت

SAMAA | - Posted: Mar 25, 2021 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 25, 2021 | Last Updated: 7 months ago
Ahmed Omer Saeed

فوٹو: اے ایف پی

سپریم کورٹ نے امریکی صحافی ڈینیل پرل قتل کیس کے ملزم عمر شیخ کو لاہور کی کوٹ لکھپت جیل منتقل کرنے کی اجازت دے دی۔

ڈینیل پرل قتل کیس کے ملزمان کی رہائی سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب فیصل چوہدری نے کہا کہ عمر شیخ کو جیل ملازمین کی کالونی میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ باہر رکھنے پر رینجرز اور پولیس کے انتظامات کرنے پڑیں گے۔

جسٹس سجاد علی شاہ نے ریمارکس دیے کہ عمر شیخ کو جیل حدود میں ہی رکھنا ہے تو پھر مہلت کیوں مانگ رہے ہیں؟ بتائیں انہیں کب پنجاب منتقل کریں گے؟

اٹارنی جنرل نے ایک ہفتے میں منتقل کرنے کی یقین دہانی کر دی۔

ڈینیل پرل قتل کیس،ملزمان کی بریت نہ ہونے پر توہین عدالت کی کارروائی

جسٹس عمر عطاء بندیال نے ریمارکس دیے کہ بریت کے بعد اِن افراد کی مسلسل حراست پر عدالت مطمئن نہیں، پنجاب حکومت عدالتی احکامات پرعمل کرتے ہوئے سہولیات فراہم کرے۔

اس دوران احمد عمر کے وکیل نے کہا کہ عادل شیخ بیمار ہے۔ عدالت نے عادل شیخ کو علاج کے لئے تمام سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے عدالتی احکامات پر عمل درآمد رپوٹس طلب کرتے ہوئے سماعت 2ہفتے کے لیے ملتوی کر دی۔

واضح رہےکہ 24 دسمبر 2020 کو سندھ ہائی کورٹ نے امریکی صحافی ڈئینیل پرل قتل کیس میں احمد عمر شیخ سمیت 4 ملزمان کی نظر بندی کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیتے ہوئے ملزمان کو فوری طور پر جیل سے رہا کرنے کا حکم دیا تھا تاہم جیل حکام کی جانب سے ضروری قانونی چارہ جوئی نہ ہونے کے باعث ایسا ممکن نہ ہوسکا۔

امریکی اخبار ’وال اسٹریٹ جرنل‘ سے وابستہ صحافی ڈینئل پرل کو 2002 میں کراچی میں اغوا کرنے کے بعد قتل کر دیا گیا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube