Monday, January 24, 2022  | 20 Jamadilakhir, 1443

عابد ملہی اور شفقت بگا کو سزائے موت سنادی گئی

SAMAA | - Posted: Mar 20, 2021 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 20, 2021 | Last Updated: 10 months ago

لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت نے موٹر وے گینگ ریپ کیس کا فیصلہ سنادیا۔ عابد ملہی اور شفت بگا کو موت کی سزا دی گئی ہے۔

انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے لاہور موٹر وے گینگ ریپ کیس کا فیصلہ کیمپ جیل میں سنایا، جو 2 روز پہلے محفوظ کیا گیا تھا۔

عدالت نے دونوں مجرمان عابد ملہی اور شفت بگا کو سزائے موت، عمر قید و جرمانے کی سزائیں سنادیں۔

گینگ ریپ کے ملزمان شفقت بگا اور عابد ملہی پر جیل میں ہی کیس چلایا گیا تھا، متاثرہ خاتون نے بھی دونوں ملزمان کو شناخت کرلیا تھا۔

کیس کا چالان 20 فروری کو عدالت میں داخل کیا گیا جبکہ 3 مارچ کو فرد جرم عائد ہوئی، اس کیس کی 3 سے 18 مارچ 2021ء کے دوران مجموعی طور پر 7 سماعتوں میں 40 گواہان کے بیانات قلمبند کئے گئے۔

مزید جانیے: موٹروے ریپ کیس کا 200صفحات پر مشتمل چالان عدالت میں جمع

عدالتی فیصلے کے مطابق استغاثہ کیس ثابت کرنے میں کامیاب رہا، دونوں ملزمان کو ریپ کی دفعہ 376 کے تحت سزائے موت، یرغمال بنانے کے جرم میں دفعہ 365 اے کے تحت عمرقید اور ڈکیتی کی دفعہ 392 میں 14، 14 سال قید کی سزائیں سنائی گئیں، ساتھ ہی مجرمان کی جائیداد ضبط اور 50، 50 ہزار جرمانہ بھی عائد کیا گیا۔

عدالتی فیصلے میں بتایا گیا کہ دونوں مجرمان کو جانے سے مارنے کی کوشش کے جرم میں دفعہ 440 کے تحت 5، 5 سال قید کی سزا، دفعہ 337 ایف ون میں 50، 50 ہزار روپے جرمانہ، 337 ایف 2 میں بھی 50، 50 ہزار جرمانہ  اور دفعہ 382 بی کے تحت تمام جائیداد ضبط کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

موٹروے پر گینگ ریپ کا واقعہ 9 ستمبر 2020ء کو پیش آیا تھا، اس رات ایک خاتون اپنے کم سن بچوں کے ساتھ لاہور سے براستہ سیالکوٹ موٹروے گوجرانوالہ جارہی تھی کہ راستے میں گاڑی کا پیٹرول ختم ہوگیا۔ اس دوران 2 ملزمان آئے اور خاتون کو بچوں سمیت قریبی کھیتوں میں لے گئے جہاں ملزمان نے پہلے خاتون کو ریپ کا نشانہ بنایا اور بعد ازاں قیمتی سامان بھی لوٹ کر فرار ہوگئے، جس میں ایک لاکھ روپے نقدی، زیورات اور ڈیبٹ کارڈ و دیگر اہم اشیاء شامل تھیں۔

ملزم شفقت عرف بگا نے جوڈیشل مجسٹریٹ رحمان الٰہی کے روبرو دفعہ 164 کا بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے اقبال جرم کرلیا تھا۔ دوسری جانب ملزم عابد ملہی نے تفتیشی افسر کے روبرو اعتراف جرم کیا اور دفعہ 161 کا بیان ریکارڈ کروایا۔

رپورٹ کے مطابق ملزم عابد ملہی نے خاتون کو 2 مرتبہ جبکہ شفقت نے ايک مرتبہ ریپ کا نشانہ بنایا۔ چالان ميں بتایا گيا ہے کہ ملزمان عابد ملہی اور شفقت کا ڈی این اے میچ کرچکا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube