Thursday, June 17, 2021  | 6 ZUL-QAADAH, 1442

کوویڈ-19 ویکسینیشن کا طریقہ کار

SAMAA | - Posted: Mar 16, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 16, 2021 | Last Updated: 3 months ago

حکومتِ پاکستان کی جانب سے 60سال سے زائد عمر کے افراد کو 21 دن میں سینوفرم ویکسین کی دو خوراکیں دی جائیں گی۔

آپ کیسے رجسٹر ہوسکتے ہیں؟

60اور 70 سال سے زیادہ عمر کے افراد: اپنا شناختی کارڈ نمبر حکومت کی جانب سے جاری کیے گئے نمبر 1166 پر اندراج کے لیے بھیج سکتے ہیں۔

آپ کسی بھی موبائل فون نمبر سے ٹیکسٹ میسج بھیج سکتے ہیں۔

جس کے جواب میں حکومت آپ کو کچھ معلومات بھیجے گی۔

جس میں ویکسین سینٹر، تاریخ اور اپکا کا مخصوص کوڈ (جو اپکو ویکسین سینٹر میں دیکھانا ہوگا)۔

ویکسینیشن سینٹر صبح 9 سے شام 5بجے تک عوام کیلیے کھلا رہے گا۔

آپ کرونا ویکسینیشن کیلیے حکومتی ویب سائٹ  پر بھی خود کو درج کراسکتے ہیں۔

nims.nadra.gov.pk

ویکسینیشن لگانے سے قبل

اگر آپ خون پتلا کرنے والی دوا استعمال کررہے ہیں تو ویکسین لگوانے سے قبل آپکو اسکا استعمال دو روز کیلیے بند کرنا ہوگا۔

یقینی بنائیں کہ ویکسین لگوانے سے قبل ناشتہ یا کھانا کھاکر جائیں کیونکہ خالی پیٹ آپکو ویکسین نہیں مل سکے گی۔

کوشش کریں کہ ایسے کپڑے پہن کر جائیں جس میں بازو پر بااسانی ویکیسن لگوائی جاسکے۔

آپ کو ویکسین کیسے لگائی جائے گی؟

پہلے آپ ویٹنگ ایریا میں کچھ دیر انتظار کرنا پڑیگا۔

جب آپ کی باری آئے گی تو اپکو رجسٹریشن ڈیسک پر جانا ہوگا۔

آپ کو کال کرنے والے ہیلتھ کئیر کا اسٹاف وہاں موجود ہوگا۔

طبی عملہ آپ سے آپکا بائیوڈیٹا، میڈیکل ہسٹری اور جو دوا آپ استعمال کرتے ہیں اسکے حوالے سے سوال جواب کریگا۔

طبی عملہ آپکا کا بلڈ پریشر، ہارٹ بیٹ اور دیگر چیزیں چیک کرےگا۔

ویکیسنیشن کے بعد آپ نادرا کی ڈیسک پر جائیں گے۔

جہاں اپکا شناختی کارڈ نمبر کی تصدیق کی جائے گی۔

اس کے بعد اگلے آپ ویکسینیشن بوتھ پر جائیں گے۔

جہاں ویکسینیٹر آپ کی تفصیلات کی تصدیق کرے گا اور ویکسین کا انتظام کرے گا۔

یاد رکھیں!

ویکسین کی ایک خوراک سے مکمل استثنیٰ حاصل نہیں ہوتا اس لیے آپ کو دونوں خوراکوں کی ضرورت ہوگی۔ اگرچہ ہم صحیح مدت کے بارے میں نہیں جانتے ہیں تاہم بیشتر ماہرین کا کہنا ہے کہ ویکسینیشن کے بعد استثنیٰ چار سے چھ ماہ تک جاری رہتا ہے۔

پہلی خوراک کے دو ہفتوں بعد جزوی استثنیٰ

دوسری خوراک کے دو ہفتوں بعد مکمل استثنیٰ

یہی وجہ ہے کہ جن لوگوں کو قطرے پلائے گئے ہیں ان کو ابھی بھی ماسک پہننے کی ضرورت ہے اور کرونا وائرس کے دیگر احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا چاہئے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube