تمام جماعتیں استعفوں پر متفق ہیں، مولانا فضل الرحمان

SAMAA | - Posted: Mar 16, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 16, 2021 | Last Updated: 3 months ago

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے الیکشن میں شکست پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے عبدالغفور حیدری کو 10 ووٹ کم ملنے کا بھی حساب مانگ لیا۔ انہوں نے آصف زرداری کی گفتگو پر حیرانی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ تمام جماعتیں لانگ مارچ اور استعفوں پر متفق ہیں۔

اپوزیشن جماعتوں پر مشتمل حکومت مخالف اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کا اجلاس مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت جاری ہے، جس میں سابق صدر اور پیپلزپارٹی کے رہنماء آصف زرداری نے استعفوں کو نواز شریف کی واپسی سے مشروط کردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پہلے میاں صاحب وطن واپس آئیں پھر استعفوں کی بات کریں، اگر لڑنا ہے تو ہم سب کو جیل جانا پڑے گا، یہ پہلی بار نہیں ہے کہ جمہوری قوتوں نے دھاندلی کا سامنا کیا۔

یہ بھی پڑھیں: آصف زرداری نے استعفوں کونوازشریف کی واپسی سے مشروط کردیا

انہوں نے مؤقف اختیار کیا کہ ایسے فیصلے نہ کئے جائیں کہ راہیں جدا ہوجائیں، ہمارا انتشار جمہوریت کے دشمنوں کو فائدہ دے گا، اسمبلیاں چھوڑنے کا مطلب عمران خان کو مضبوط کرنا ہے، ہم پہاڑوں پر نہیں بلکہ پارلیمان میں رہ کر لڑتے ہیں۔

مولانا فضل الرحمان نے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے آصف زرداری کی گفتگو پر حیرانگی کا اظہار کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی تک آپ کی باتیں سب نے مانی ہیں، اب باقی جماعتوں کی رائے کو اہمیت دینا ہوگی، تمام جماعتیں لانگ مارچ اور استعفوں کے معاملے پر متفق ہیں۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ نے چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمیں سینیٹ الیکشن میں شکست پر سیخ پا ہوگئے، مولانا فضل الرحمان نے عبدالغفور حیدری کو 10 ووٹ کم ملنے پر بھی حساب مانگ لیا، وہ بولے کہ سب جماعتوں نے یوسف رضا گیلانی کی بھرپورحمایت کی، سینیٹ الیکشن میں ہم سے ووٹ لیا ہمیں ووٹ کیوں نہیں دیا؟، ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے انتخاب میں اپوزیشن کے 10ووٹ کہاں گئے، حکومتی امیدوار کو پڑنے والے ووٹوں کا ذمہ دار کون ہے؟۔

مریم نواز شریف نے پی پی رہنماء سے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ زرداری صاحب آپ نے جو باتیں کیں مجھے دکھ ہوا، آپ کو باپ کا درجہ دے کر آپ سے گلہ کرنا اپنا حق سمجھا، آپ ضمانت دیں والد کی زندگی کو کوئی خطرہ نہیں ہوگا، والد نے میرے ساتھ نیب کی درجنوں پیشیاں بھگتی ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube