Thursday, January 20, 2022  | 16 Jamadilakhir, 1443

لاہور:ضمانت منسوخی کی درخواست،مریم کو نوٹس جاری

SAMAA | - Posted: Mar 15, 2021 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 15, 2021 | Last Updated: 10 months ago

فائل فوٹو

لاہور ہائی کورٹ نے نیب چیئرمین کی جانب سے ضمانت منسوخی کی درخواست سماعت کیلئے مقرر کرتے ہوئے مریم نواز سے 7 اپریل تک جواب طلب کرلیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں جسٹس سرفراز ڈوگر کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے 15 مارچ کو نیب درخواست کی سماعت کی۔ سماعت کے آغاز پر نیب حکام نے کہا کہ مریم کی ضمانت لاہور ہائی کورٹ نے منظور کی۔ مریم نواز ضمانت کا غلط استعمال کر رہی ہیں۔ ہم نے مریم کو دستاویزات سمیت بلایا۔ مریم اور ان کے کارکنوں نے نیب کے آفس پر پتھراؤ کیا۔

جس پر عدالت نے پوچھا کہ ضمانت کے اخراج کا گراؤنڈ کیا ہے؟۔ آپ نے عدالت کو لکھ کر دیا کہ مریم نواز سے مزید تفتیش کی ضرورت نہیں ہے، عدالت نے نیب پراسکیوٹر فیصل بخاری کو دلائل دینے سے روک دیا اور کہا کہ یہ کیس ڈپٹی پراسیکیوٹر نے دائر کیا وہ بحث کریں۔

ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل چوہدری خلیق الزمان نے عدالت کے روبرو کہا کہ نیب نے مریم نواز کو بلایا تھا۔ جس پر عدالت نے سوال کیا کہ مریم ریمانڈ پر رہی، تو دوبارہ کیوں بلایا؟۔ نیب پراسیکیوٹر نے جواباً کہا کہ انکوائری کو تفتیش میں بدلا اس لیے بلایا۔ عدالت نے استفسار کیا کہ اگست 2020 کو بلایا اور اس کے بعد آپ خاموش ہوگئے۔ 8ماہ آپ کیوں چپ رہے؟۔ جس پر نیب نے کہا کہ سینیٹ کے الیکشن اور ضمنی انتخاب کی وجہ سے نہیں بلایا۔

عدالت نے نیب کی درخواست پر مختصر سماعت کے بعد درخواست باقاعدہ سماعت کیلئے مقرر کرتے ہوئے مریم نواز سے7 اپریل تک جواب طلب کرلیا۔

واضح رہے کہ چیئرمین نیب نے ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل پنجاب کی وساطت سے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی تھی جس میں مؤقف اپنایا کہ مریم نواز ضمانت پر رہائی کے بعد سے مسلسل ریاستی اداروں پر حملے کر رہی ہیں۔

نیب کی دائر کردہ درخواست میں مؤقف تھا کہ مریم نواز چوہدری شوگر ملز اور منی لارنڈرنگ کیسز میں لاہور ہائیکورٹ سے ضمانت پر ہیں، 2020 ء میں چوہدری شوگر ملز کیس میں نہ ذاتی حیثیت میں پیش ہوئیں اور نہ ہی دستاویزات طلبی نوٹس پر کوئی توجہ دی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube