Monday, January 24, 2022  | 20 Jamadilakhir, 1443

سندھ میں تعلیمی ادارے بند ہونے کی خبر درست نہیں،سعیدغنی

SAMAA | - Posted: Mar 10, 2021 | Last Updated: 11 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 10, 2021 | Last Updated: 11 months ago

وزیرتعلیم سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ صوبےبھرمیں تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کھلیں رہیں گے۔

بدھ کووزیرتعلیم سعیدغنی کی جانب سے جاری بیان میں وضاحت کی گئی ہے کہ سندھ میں تمام تعلیمی ادارے 50 فیصد ہی طالبعلموں کوبلانے کے پابند ہیں اور یہی سلسلہ مزید جاری رہے گا۔

انھوں نے بتایا کہ این سی او سی میں پنجاب کے کچھ شہروں اور پشاور میں کرونا وائرس کے کیسز کی شرح بڑھنے پر وہاں 15 روز کے لئے تعلیمی ادارے موسم بہاراں کی چھٹیوں کے لئےکچھ پہلے ہی بند کئے گئے ہیں تاہم صوبہ سندھ میں ایسی کوئی تعطیلات نہیں ہوتی ہیں۔

مزیدپڑھیں:اسلام آباد،لاہور،پشاورکےتعلیمی ادارے 2 ہفتے کیلئے بند

سعیدغنی نےوضاحت دی کہ محکمہ تعلیم سندھ کی اسٹئیرنگ کمیٹی کےگزشتہ اجلاس میں جوفیصلے ہوئےان پرہی عمل درآمد ہوگا۔اگرکسی تعلیمی ادارے میں خدانخواستہ کرونا کے کیسز آتے ہیں تو اُس کوبند کیا جائے گا اورسندھ میں تعلیمی ادارے 15 مارچ سے بند ہونے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔

وزیرتعلیم شفقت محمود نے بتایا کہ سندھ اور بلوچستان میں حالات تقریبا ٹھیک ہیں اور 50 فیصد بچے روز اسکول آیا کریں گے۔ اس دوران بچے ایس او پیز پر پابندی سے عمل کریں گے۔ تاہم پنجاب اور خیبرپختون خوا میں 15 مارچ سے موسم بہار کی چھٹیاں شروع 28 مارچ تک بند رہیں گے۔

پنجاب کے جن شہروں میں تمام تعلیمی اداروں کو پیر سے 2 ہفتے کے لیے بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے ان میں فیصل آباد،گوجرانوالہ،لاہور،گجرات،ملتان،راولپنڈی اور سیالکوٹ شامل ہیں۔اسلام آباد کے تمام تعلیمی ادارے بھی بند رہیں گے۔ پشاور کے تمام تعلیمی اداروں کو بھی موسم بہار کی تعطیلات کےلیے پیر سے بند کردیا جائےگا۔ تاہم اس دوران امتحانات جاری رہیں گےاورپابندی کا اطلاق نہیں ہوگا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube