ڈسکہ انتخاب، وفاقی حکومت سپریم کورٹ سے رجوع کرے گی

SAMAA | - Posted: Feb 25, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 25, 2021 | Last Updated: 3 months ago

فوٹو : آن لائن

جانب وفاقی حکومت ڈسکہ میں دوبارہ انتخاب کرانے سے متعلق الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چلینج کرے گی۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈسکہ کے ضمنی انتخاب کے نتائج کو مشکوک اور ووٹرز کو سازگار ماحول فراہم نہ ہونے کی بنیاد پر دوبارہ الیکشن کا فیصلہ سنایا ہے جبکہ پولنگ کے روز امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے میں ناکامی اور فرائض کی ادائیگی میں غفلت برتنے پر کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن اور ریجنل پولیس آفیسر کو برطرف کرنے کا حکم دیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اجلاس میں وفاقی کابینہ نے فیصلہ کیا کہ وفاقی حکومت الیکشن کمیشن اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرے گی۔ کابینہ اجلاس میں سینیٹ انتخابات سے متعلق صدارتی ریفرنس پر بھی غور کیا گیا۔

ڈسکہ الیکشن، غفلت پر کمشنر گوجرانوالہ، ریجنل پولیس آفیسر برطرف

الیکشن کمیشن نے ڈسکہ کے ضمنی انتخاب کے دوران فرائض کی ادائیگی میں غفلت برتنے پر کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن اور ریجنل پولیس آفیسر ( آر پی او) کو برطرف کرنے کا حکم دے دیا۔

گزشتہ ہفتے ڈسکہ میں ہونے والے انتخاب میں 23 پولنگ اسٹیشن کا عملہ بیلٹ باکس سمیت 14 گھنٹے لاپتہ رہا جس کے باعث الیکشن کمیشن نے این اے 75 کے ضمنی انتخاب کو کالعدم قرار دیتے ہوئے دوبارہ الیکشن کا فیصلہ سنایا ہے۔

اس کے ساتھ ہی الیکشن کمیشن نے غفلت کے مرتکب کمشنر گوجرانوالہ اور آر پی او کو عہدوں سے ہٹانے جبکہ ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او سیالکوٹ، اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ کو معطل کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے فرائض چیف سیکریٹری اور آئی جی پنجاب کو بھی غفلت برتنے پر چار مارچ کو طلب کرلیا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube