Monday, October 25, 2021  | 18 Rabiulawal, 1443

’الیکشن کمیشن انتخابی عمل سے کرپشن ختم کرناہی نہیں چاہتا‘

SAMAA | - Posted: Feb 16, 2021 | Last Updated: 8 months ago
Posted: Feb 16, 2021 | Last Updated: 8 months ago

فوٹو: آن لائن

سپریم کورٹ میں سینیٹ انتخابات سے متعلق صدارتی ریفرنس پر سماعت ہوئی، الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سینیٹ انتخابات میں قابل شناخت بیلٹ پیپرز کا استعمال غیرقانونی قرار دیدیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ الیکشن کمیشن انتخابی عمل سے کرپشن ختم کرنا ہی نہیں چاہتا، تب ہی ابھی تک کچھ نہیں کیا۔

عدالت عظمیٰ میں اوپن بیلٹ سے متعلق صدارتی ریفرنس پر سماعت دلچسپ مرحلے میں داخل ہوگئی، چیف الیکشن کمشنر نے قابل شناخت بیلٹ پیپرز کی مخالفت کردی۔

الیکشن کمیشن نے مؤقف اپنایا کہ سینیٹ انتخابات قابل شناخت بیلٹ پیپر سے کرانا ہے تو آئین میں ترمیم کرنا ہوگی۔

مزید جانیے: الیکشن کمیشن سےسینیٹ انتخابات میں کرپشن روکنے کی اسکیم طلب

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا قانون کے مطابق ووٹ ڈالنے کا عمل خفیہ ہونا لازمی ہے، کاسٹ ہونے کے بعد ووٹ خفیہ نہیں رکھا جاسکتا۔

چیف جسٹس گلزار احمد نے پوچھا انتخابات سے کرپشن ختم کرنے کیلئے کیا اقدامات کیے؟۔ سکندر سلطان راجہ نے بتایا ووٹوں کی خریداری کی ویڈیو کا نوٹس لیکر اجلاس بلالیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب اورخیبرپختونخوا کی اوپن بیلٹ سے سینیٹ الیکشن کی حمایت

چیف جسٹس نے کہا کہ 2018ء کی ویڈیو آپ کو اب ملی، یہ کام تو الیکشن سے پہلے کرنا چاہئے تھا۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے معاملے پر شعری تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’جانے نہ جانے گُل ہی نہ جانے، باغ تو سارا جانے ہے‘۔

منصف اعلیٰ نے الیکشن کمیشن کی رپورٹ غیرتسلی بخش قرار دے دی۔ جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو سب معلوم ہے کہ انتخابات کیسے ہوتے ہیں لیکن شاید آپ انتخابی عمل سے کرپشن ختم نہیں کرنا چاہتے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کو آزادانہ فیصلہ کرتے ہوئے اپنا مؤقف دینا ہوگا۔ سپریم کورٹ میں کیس کی مزید سماعت بدھ کو ہوگی۔

تفصیلات جانیں: سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ سے کرانے کا صدارتی آرڈیننس جاری

پاکستان تحریک انصاف نے سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ سے کرانے کیلئے صدارتی ریفرنس جاری کرتے ہوئے اسے عدالت عظمیٰ کی تشریح سے مشروط کردیا تھا۔

پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن سمیت دیگر اپوزیشن جماعتوں نے سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ سے کرانے کی شدید مخالفت کی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube