Saturday, January 22, 2022  | 18 Jamadilakhir, 1443

جنوبی وزیرستان میں کرفیو نافذ، سرچ آپریشن جاری

SAMAA | - Posted: Feb 16, 2021 | Last Updated: 11 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 16, 2021 | Last Updated: 11 months ago

فائل فوٹو

خیبر پختونخوا کے علاقے وانا میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے، جب کہ علاقے میں فورسز کا سرچ آپریشن بھی جاری ہے۔

ضلعی انتظامیہ کے مطابق جنوبی وزیرستان کے علاقے وانا میں کرفیو کا نفاذ سیکیورٹی فورسز کی گاڑی پر ہونے والے حملے کے بعد کیا گیا۔ گزشتہ روز 15 فروری بروز پیر وانا بائی پاس روڈ پر دہشت گردوں کی جانب سے سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

دہشت گردوں نے وانا بائی پاس روڈ پر ریمورٹ کنٹرول ڈیوائس سے فورسز کی گاڑی کو نشانہ بنایا، جس میں 3 اہل کار شہید، جب کہ 8 زخمی ہوئے تھے۔

حملے کے بعد قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے مختلف علاقوں میں سرچنگ کا عمل جاری ہے۔ کرفیو کے دوران بازار، دکانیں اور مارکٹیں بند رکھی گئی ہیں۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے عوام سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ بازاروں کا رخ نہ کریں۔

کرفیو کے دوران شہر کے داخلی اور خارجی راستوں کو بھی بند کردیا گیا ہے، جس سے شہر کے باہر جانے والوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ انتظامیہ کی جانب سے تاہم یہ نہیں بتایا گیا کہ کرفیو کب تک نافذ رہے گا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل 12 فروری کو وزیرستان کے علاقے مکین میں سیکیورٹی فورسز کی چیک پوسٹ پر دہشت گردوں کے حملے میں فائرنگ سے پاک فوج کے 4 جوان شہید ہوئے تھے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں میں لانس نائیک عمران علی، سپاہی عاطف جہانگیر، سپاہی عزیز اور سپاہی انیس الرحمان شامل تھے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ افغانستان کے ساتھ لگنے والے اس سرحدی علاقے میں پاکستان کی فوج طویل عرصے سے دہشت گردوں کے خاتمے کیلئے جنگ میں مصروف ہے، جب کہ ان سرحدی علاقوں میں سرحد پار سے بھی دہشت گرد حملہ کرتے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube