ریلوے کی نجکاری کیخلاف ملازمین کا مظاہرہ

SAMAA | - Posted: Feb 10, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 10, 2021 | Last Updated: 2 months ago

آسامیاں پر کرنے کا بھی مطالبہ

ریلوے کی نجکاری کے خلاف ریلوے ملازمین نے کراچی سٹی اسٹیشن ڈی ایس آفس کے سامنے احتجاج کیا گیا۔

ریلوے مظاہرین نے نجکاری کے فیصلے کیخلاف نعرے بازی کی، شرکاء نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھےجس پر ان کے مطالبات درج تھے۔

خیبرکے پہاڑوں پر بل کھاتی ریلوے قصہ پارینہ بن گئی

مظاہرین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ: محکمے کو خسارے سے نکالا جائے، افسروں اور ملازمین کا اضافی بوجھ کم کیا جائے، ریلوے میں اصلاحات کے منصوبے پر کام کیے جائیں۔

مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ ریلوے میں 28 ہزار آسامیاں خالی ہیں، اُنہیں پر کیا جائے۔ اس موقع پر مظاہرین نے اسلام آباد میں سرکاری ملازمین کیخلاف طاقت کےاستعمال کی مذمت بھی کی۔

دوسری جانب لاہور کے ریلوے حکام نے پہلے مرحلے میں اکاؤنٹس ڈیپارٹمنٹ کے 17 ویں اور 18ویں گریڈ کے 83 افسران کو فارغ کرنے کا منصوبہ بنالیا ہے۔

کراچی:ریلوے کی قدیم تاریخ سموئےعجائب گھر

چیف اکاؤنٹس افسر ریلوے کے مطابق محکمہ ریلوے خسارے میں ہے اس لیے ڈاؤن سائزنگ کر رہے ہیں اور یہ فیصلہ ہائی اتھارٹی کی جانب سے کیا گیا گیا۔ اس کے بعد دیگر ڈیپارٹمنٹ میں بھی ڈاؤن سائزنگ کرنے کا پلان ہے۔

ڈاون سائزنگ سے پہلے متعلقہ افسران کو ریلوے ہیڈ کوارٹر پیش ہونے کا کہا گیا تو انہوں نے احتجاجاً آنے سے انکار کردیا۔ ان کا کہنا ہے کہ اکاؤنٹس ڈیپارٹمنٹ میں ملازمین کی تعداد پہلے ہی کم ہے اسلیے عملہ کم کرنے سے نقصان ہوگا۔

ریلوے افسر امجد کا کہنا ہے کہ اکاؤنٹس ڈیپارٹمنٹ میں پہلے کام کرنے والے ملازمین کی قلت ہے۔ مزید کم کرنے سے نقصان ہوگا۔ یہ لوگ آڈٹ اینڈ اکاؤنٹس ڈیپارٹمنٹ کو اس لیے کم کررہے ہیں تاکہ انکے گھپلوں کو کوئی نہ پوچھے۔

لاہور میں مظاہرین کے احتجاج کے باعث محکمے نے افسران کی طلبی اور ان کے انٹرویو کچھ روز کیلیے موخر کردیے ہیں۔

مظاہرین کا کہنا ہے کہ اگر ہمارے ساتھ یہی رویہ اپنایا گیا تو تمام ملازمین ہڑتال کریں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube