لاہور: کتابیں چھاپنے والے اداروں کا کاروبار تاحال متاثر

SAMAA | - Posted: Feb 9, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Editing & Writing | Adeel Tayyab
SAMAA |
Posted: Feb 9, 2021 | Last Updated: 2 months ago

کرونا کی وجہ سے معاملات بہتر نہ ہوسکے

لاہور میں اسکولوں کی طویل بندش کے باعث کتابیں چھاپنے والے اداروں کا کاروبار تاحال بحال نہیں ہوسکا۔

تعلیمی ادارے بند رہنے سے شہر میں کتابوں کی فروخت کم ہونے سے گودام بھر گئے جبکہ پرنٹنگ مشینوں کا پہیہ جام ہونے پر ملازمین فارغ بیٹھنے پر مجبور ہیں۔

ملازمین کا کہنا ہے کہ کرونا کی وجہ سے ابھی تک ان کے کاروبار بحال نہیں ہوئے۔ کام نہیں ہے لیکن ہر روز آتے ہیں اور مشینوں پر کپڑا پھیر کر صفائی کرتے ہیں۔ گھر کا نظام چلانے کے لیے مالک تھوڑی بہت تنخواہ دے دیتا ہے۔

دوسری طرف نصاب کی تبدیلی سے متعلق پبلشنگ ہاوسز کے مالکان کہتے ہیں کہ حکومت کو یکساں نصاب کے نظام کو ایک دم نہیں بلکہ بتدریج اپنانا چاہیئے۔ مقامی پبلشرز اور بک امپورٹرز دونوں ہی پریشان ہیں۔

صدر ٹیکسٹ بک پبلشرز ایسوسی ایشن فواز نیاز کے مطابق نصاب کے نئے نظام کے تحت کم ازکم 30 کتابوں کو ازسر نو تصنیف کرکے حکومتی منظوری کے بعد چھاپا جاسکے گا۔

پبلشرز کا کہنا ہے کہ اگر یہ صورتحال برقرار رہی تو لاکھوں افراد متاثر ہوسکتے ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube