مولا بخش چانڈیو اور ملیکا بخاری کی نوک جھوک

SAMAA | - Posted: Feb 2, 2021 | Last Updated: 5 months ago
Posted: Feb 2, 2021 | Last Updated: 5 months ago

پیپلز پارٹی کے رہنما مولا بخش چانڈیو اور تحریک انصاف کی رہنما ملیکا بخاری کے درمیان ٹاک شو کے دوران نوک جھوک ہوئی۔ دونوں نے ایک دوسرے کے رویے کو قابل مذمت قرار دیا۔

سماء ٹی وی کے ٹاک شو ندیم ملک لائیو میں بحث کے دوران ملیکا بخاری نے سندھ حکومت کو کرپٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ صوبے میں کرپشن پر اعلیٰ عدالتوں نے ریمارکس دیے ہیں۔ مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت کے بارے میں عدالتوں نے کیا ریمارکس دیے ہیں، ذرا وہ بھی سن لیں۔

مولا بخش چانڈیو کی گفتگو کے دوران جب ملیکا بخاری نے مداخلت کی تو دونوں کے مابین گرما گرمی ہوگئی۔ مولا بخش چانڈیو نے ندیم ملک سے کہا کہ آپ آئندہ کسی خاتون کو ٹاک شو میں دعوت دیں تو مجھے نہ بلائیں، یہ بات کرنے کا موقع نہیں دیتی۔ جیسے گھر میں بیٹھی ہیں۔

انہوں نے پھر ملیکا بخاری کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’آپ گھر میں نہیں ہیں۔ ٹی وی پر ہیں، دوسرے کو سنیں۔‘ وہ اپنی بات مکمل نہیں کرپائے تھے کہ ملیکا بخاری نے ان کو ٹوکتے ہوئے کہا کہ ’چانڈیو صاحب آپ کا رویہ بالکل قابل مذمت ہے۔ آپ کا احترام کرتے ہیں، آپ بات نہیں کرنے دے رہے۔‘

اس دوران مولا بخش چانڈیو مسلسل کچھ بولنے کی کوشش کرتے رہے مگر ان کی بات ملیکا بخاری کی گھن گھرج میں گم ہوکر رہ گئی۔

ٹاک شو کے دوران اس سے قبل بھی ایک موقع پر دونوں کے مابین تلخی اس قدر بڑھی کہ میزبان کو بریک پر جانا پڑا۔ مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان شکل و صورت سے بہت اچھے ہیں مگر وہ دلیری سے جھوٹ بولتے ہیں۔ ایک بھی سچ نہیں بولتے۔

اس پر ملیکا بخاری نے کہا کہ آپ ذاتیات کی بات نہ کریں۔ مولا بخش چانڈٰیو نے کہا کہ ’یہ ذاتیات کی بات نہیں ہے۔ اگر ذاتیات کی بات کروں گا تو آپ اٹھ جائیں گی۔ جن کو اپنے بچوں کی تعداد کا نہیں پتہ، اس کی ذاتیات کیا ہے۔ سیاسی لیڈر کی اتنی بات بھی نہیں کریں گے کہ وہ جھوٹ بول رہا ہے۔‘

ندیم ملک نے ان سے پوچھا کہ وزیراعظم نے کیا جھوٹ بولا ہے، ملیکا بخاری نے بھی ندیم ملک کی ہاں میں ہاں ملائی۔ پھر مولا بخش چانڈیو نے وزیراعظم کے اقتدار میں آنے سے قبل کے دعوے اور وعدے یاد دلاتے ہوئے کہا کہ ’پرائم منسٹر ہاؤس میں اسکول کھل گیا ہے۔ گورنر ہاؤسز گرا دیے گئے ہیں۔ وزیر صاحبان اب پروٹول نہیں لے رہے۔ کیا آئی ایم ایف سے قرضہ نہیں لیا، کہتے تھے کہ ہم خودکشی کریں گے۔‘

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube