Sunday, September 26, 2021  | 18 Safar, 1443

پاک فضائیہ کا طیارہ کروناویکسین لے کر اسلام آباد پہنچ گیا

SAMAA | - Posted: Feb 1, 2021 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 1, 2021 | Last Updated: 8 months ago

پہلے مرحلے میں ہیلتھ ورکرزکو لگائی جائیگی

چین سے کرونا ویکسین لے کر طیارہ آج یکم فروری کو اسلام آباد پہنچ گیا۔ چینی سفیر کا کہنا ہے کہ سب سے پہلے پاکستان کو ویکسين دے کرخوش ہیں۔

پہلی کھیپ میں کرونا ویکسین کی 5 لاکھ خوراک پاکستان آئی ہیں۔ ادارے کے مطابق کرونا ویکسین سندھ اور بلوچستان بھی بھیجی جائے گی۔  ویکسین چین سے خصوصی کنٹرینرز میں پاکستان لائی گئی۔

دوسری جانب معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ الحمد اللہ پاکستان میں سائنو فارم کرونا ویکسین آگئی ہے۔ چین اور تمام لوگوں کا شکریہ ادا کرتے ہیں، جن کی وجہ سے یہ ممکن ہوا۔

انہوں نے کہا کہ این سی او سی اور صوبوں نے کرونا کے پھیلاؤ کو روکنے میں کلیدی کردار ادا کیا۔ فرنٹ لائن ورکرز کو سلام پیش کرتا ہوں۔ سب سے پہلے فرنٹ لائن ورکرز کو ویکسین لگے گی۔

قبل ازیں نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ کرونا ویکسین ای پی آئی کے مرکزی کولڈ اسٹور میں ذخیرہ ہوگی، ای پی آئی سے کرونا ویکسین صوبوں کو روانہ کی جائے گی۔ ویکسین کی فراہمی کیلئے صوبائی اور ضلعی سطح پر ویکسین کوآرڈینیشن مراکز قائم کے گئے ہيں۔

وفاقی وزیر اسد عمر کے مطابق پہلے مرحلے میں کرونا ویکسین ہیلتھ ورکرز کو دی جائے گی۔

وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا تھا کہ کو ویکس کی جانب سے 1 کروڑ 70 لاکھ ڈوز فراہمی کا خط موصول ہوا ہے۔ کرونا ویکسین فروری سے ملنا شروع ہو گی۔ 6ملین ویکسین مارچ تک مل جائیں گی۔

انہوں نے کہا کہ ویکسین کا اثر چند ہفتوں میں نہیں، بلکہ چند ماہ میں ضرور پڑے گا۔ پہلی ترجیح ہیلتھ ورکرز کو ویکسین لگانا ہے۔ ایک کروڑ 70لاکھ ویکسین ڈوزز جون 2021 تک مل جائیں گی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube