کرونا ویکسین کیلئے رجسٹریشن کا طریقہ

SAMAA | - Posted: Jan 27, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 27, 2021 | Last Updated: 3 months ago

Corona vaccine

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے کورونا ویکسین لگانے کے لیے جامع پلان تیار کرلیا۔ تمام شہری ایس ایم کے ذریعے رجسٹریشن کریں گے۔ دوسری جانب جاپان نے پاکستان کو پولیو ویکسین کی خریداری کے لیے 45 لاکھ ڈالر گرانٹ کی منظوری دے دی۔

این سی او سی کے مطابق کورونا ویکسین لگانے کے لیے جامع پلان وفاق اور صوبوں کے ساتھ مشاورت کے بعد تیار کیا گیا جس میں عالمی اصولوں کو مد نظر رکھا گیا ہے۔ پلان کے مطابق تمام شہری ایس ایم ایس کے ذریعے 1166 پر اپنا شناختی کارڈ نمبر بھیجیں گے۔

رجسٹریشن کے لیے این آئی ایم ایس کی ویب سائٹ کا استعمال بھی کیا جا سکے گا۔ اے وی سی سینٹرز میں ویکسین کی دستیابی پر شہریوں کو اپوائنمنٹ تاریخ کے قریب انتظامیہ کی جانب سے ایس ایم ایس بھیجا جائے گا۔

رجسٹریشن سے لیکر ویکسین لگانے تک طریقہ کار

سب سے پہلے اپنا شناختی کارڈ نمبر مسیج میں لکھ کر 1166 پر ارسال کریں یا قومی ادارہ صحت ویب سائٹ پر فارم بھریں۔

دوسرے مرحلے میں این سی او سی آپ کے شناختی کارڈ کے موجودہ پتے کے مطابق آپ کو مخصوص ویکسین سینٹر کا پتہ ایم ایس کے ذریعے بھیجے گا۔

تیسرے مرحلے میں جب ویکسین دستیاب ہوجائے تو رجسٹریشن کرنے والے شہریوں کو ایس ایم ایس کے ذریعے آپ کو ایک مخصوص تاریخ اور وقت بتا کر ویکسین لگانے کیلئے بلایا جائے گا۔

چوتھا مرحلہ یہ ہے کہ آپ ایس ایم ایس یا ویب سائٹ کے ذریعے اپنی مرضی کا ایڈریس ڈال سکتے ہیں۔ یہ ان لوگوں کیلئے مفید ہے جو دوسرے شہروں میں مقیم ہیں۔

پانچویں مرحلے میں آپ ویکسین سینٹر پر جاکر اپنا قومی شناختی کارڈ اور ایس ایم ایس پر موصول ہونے والا پن کوڈ دکھائیں گے۔

چھٹے مرحلے میں ویکسین سینٹر کا عملہ آپ کے شناختی کارڈ اور پن کوڈ کی تصدیق کرے گا۔

ساتویں مرحلے میں آپ کو ویکسین لگادی جائے گی اور آپ کو کم از کم 30 منٹ کے لیے ویکسین سینٹر میں ہی بٹھایا جائے گا اور اس دوران آپ کی مانیٹرنگ کی جائے گی۔

آٹھویں مرحلے میں آپ اپنے گھر جائیں گے اور وزارت صحت کا عملہ سرکاری ڈیش بورڈ پر ڈیٹا اپ ڈیٹ کردے گا۔

یاد رہے کہ پاکستان میں ابھی تک ویکسین دستیاب نہیں اور ابھی تک حکومت نے بھی واضح اعلان نہیں کیا کہ پاکستان میں ویکسین کب تک آئے گی۔ وفاقی وزرا کے متضاد بیانات نے کنفیوژن میں مزید اضافہ کردیا ہے۔

دوسری جانب جاپان کی جانب سے پاکستان کو پولیو ویکسین کی خریداری کے لیے 45 لاکھ 70 ہزار ڈالر کی منظوری دی گئی ہے۔ گرانٹ کے لیے جائیکا اور یونیسیف کے درمیان معاہدے پر دستخط ہوگئے۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کا کہنا ہے کہ حکومت نے کورونا کے دوران بھی انسداد پولیو مہمات کا انعقاد کیا۔ عالمی برادری کے تعاون سے پاکستان بہت جلد پولیو فری ملک بن جائے گا۔ جاپان پولیو کے خاتمے کیلئے 1996 سے پاکستان کے ساتھ تعاون کررہا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube